.

مشرق وسطیٰ کا دورہ، چینی صدر تہران پہنچ گئے

شی جن پنگ اس سے پہلے مصر اور سعودی عرب کا دورہ کرچکے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

چین کے صدر شی جن پنگ مشرق وسطیٰ کے دورے کے تیسرے حصے میں ایران پہنچ چکے ہیں۔ ان کے اس دورے کا مقصد مشرق وسطیٰ میں خطے کے بااثر ممالک کے ساتھ معاشی تعلقات بڑھانا ہیں۔

ایران کی سرکاری نیوز ایجنسی "ایرنا" کے مطابق چینی صدر کے ہمراہ تین نائب وزرائے اعظم اور چھ وزراء کے ساتھ ایک اعلیٰ سطحی تجارتی وفد بھی تہران آیا ہے، کا استقبال ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کیا تھا۔

ایران کے مقامی میڈیا کے مطابق مصر اور سعودی عرب کے دورے کے بعد ایران پہنچنے والے شی جن پنگ ہفتے کے روز اپنے ایرانی ہم منصب حسن روحانی اور ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ روح اللہ خمینی سے ملاقات کریں گے۔

بیجنگ تہران کے تیل کی برآمدات کا سب سے بڑا خریدار ہے اور ایک اعداد وشمار کے مطابق 2014ء میں دونوں ممالک کے درمیان 52 ارب ڈالر کی تجارت ہوئی تھی۔

ایران کے نائب وزیر خارجہ ابراہیم رحیم پور نے سرکاری ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ چینی صدر کے دورے کے دوران سٹریٹیجک تعاون کے معاہدے سمیت 16 معاہدوں پر دستخط کئے جائیں گے۔