.

داعش کا لیبی فضائیہ کا طیارہ مار گرانے کا دعوی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبی فوج کے مطابق لیبیا کی بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ حکومت کا مگ 23 طیارہ باغیوں پر بمباری کی کارروائی کے دوران گرا دیا گیا ہے۔

حکومتی افواج کے ترجمان ناصر الحسی کا کہنا تھا کہ یہ جہاز بن غازی کے شمال مغرب میں واقع قریونس میں القاعدہ کے قریب سمجھی جانے والی تنظیم 'شوریٰ کونسل' کے ٹھکانوں پر بمباری میں مصروف تھا۔

انٹرنیٹ پر شدت پسندوں کی سرگرمیوں پر نظر رکھنے والے امریکی مانیٹر ادارے "سائٹ" انٹیلی جنس گروپ کا کہنا تھا کہ داعش کے جنگجوئوں نے دعویٰ کیا ہے کہ یہ جہاز انہوں نے گرایا ہے۔

ایک فوجی ذرائع کے مطابق پائلٹ اس حادثے میں بچ نکلنے میں کامیاب ہوگیا تھا مگر ابھی فوری طور پر اس سے متعلق مزید اطلاعات موجود نہیں ہیں۔ اس ہفتے کے دوران یہ اپنی نوعیت کا دوسرا جہاز حادثہ ہے۔

پیر کے روز ایک اور مگ 23 طیارہ مشرقی شہر درناء میں داعش کے ٹھکانوں پر بمباری کے دوران گر کر تباہ ہوگیا تھا۔ 'لانا' نیوز ایجنسی کے مطابق حکومت نے تکنیکی خرابی کو اس حادثے کی وجہ قرار دیا تھا۔

اس حادثے سے قبل جہاز نے درنا سے 15 کلومیٹر دور داعش کے ٹھکانوں پر بمباری کی تھی۔

اس کے علاوہ جنوری کے اوائل میں بھی بن غازی میں ایک جہاز حادثے کا شکار ہوگیا تھا۔