.

یمن کی جانب سے گولہ باری سے ایک سعودی محافظ شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے جنوبی سرحدی علاقے میں یمن کی جانب سے گولہ باری سے ایک سرحدی محافظ شہید ہوگیا ہے۔

سعودی وزارت داخلہ کی جانب سے سوموار کو جاری کردہ بیان کے مطابق سرحدی محافظ جنوبی صوبے جازان کے الحارث سیکٹر میں ایک سرحدی چوکی پر اتوار کی شب گولہ باری سے شہید ہوا تھا۔

سعودی عرب کے سرحدی علاقے میں گذشتہ سال مارچ سے حوثی شیعہ باغیوں کے ساتھ جھڑپوں اور ان کی گولہ باری سے نوّے سے زیادہ شہری اور فوجی جاں بحق ہوچکے ہیں۔

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کے لڑاکا طیارے مارچ 2015ء سے یمن میں حوثی شیعہ باغیوں کے ٹھکانوں پر فضائی حملے کررہے ہیں جبکہ یمن کے شمالی علاقے میں موجود حوثی باغی سرحد پار سعودی آبادی اور سکیورٹی فورسز کی جانب گولہ باری کرتے رہتے ہیں۔ اقوام متحدہ کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق یمن میں جاری لڑائی میں چھے ہزار ایک سو سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ان میں نصف سے زیادہ عام شہری ہیں۔