.

بہترین صوتی کتاب کا گریمی ایوارڈ جمی کارٹر کے نام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سابق امریکی صدر جمی کارٹر (91 سالہ) نے بہترین صوتی کتاب کی کیٹیگری کا گریمی ایوارڈ جیت لیا۔ انہیں یہ ایوارڈ اپنی یاداشتوں کا صوتی البم تیار کرانے پر ملا ہے، جس کے بعد کارٹر موسیقی کی دنیا کے اس اہم ترین ایوارڈ کو دو مرتبہ جیتنے والوں کی فہرست میں شامل ہو گئے ہیں۔

اپنی کتاب " A Full Life: Reflections at Ninety" میں سابق صدر نے اپنے سیاسی کیریئر کی منازل طے کرنے سے لے کر 1980 میں رونالڈ ریگن کے سامنے ہزیمت تک کو بیان کیا ہے۔ اس کے ڈیموکریٹک رہ نما نے دنیا بھر میں حالیہ صورت حال کے حوالے سے اپنی امیدوں اور اندیشوں کا بھی اظہار کیا ہے جن میں بالخصوص خواتین کی پوزیشن کو کھوکھلا کرنے کے نتائج شامل ہیں۔

وائٹ ہاؤس سے رخصت ہونے کے بعد جمی کارٹر نے اپنی زندگی کو تیسری دنیا کے ممالک میں امن، صحت عامہ اور ترقی کے لیے وقف کردیا۔

کارٹر جنہوں نے دسمبر میں یہ اعلان کیا تھا کہ وہ دماغ میں رسولی کے عارضے سے صحت یاب ہو چکے ہیں، پیر کے روز لاس اینجلس میں منعقدہ تقریب میں اپنا ایوارڈ لینے کے لیے موجود نہیں تھے۔

اس ایوارڈ کے لیے سابق صدر کو متعدد مضبوط امیدواروں کا سامنا تھا جن میں موسیقی کی اسٹار پنک روک اور معروف گلوکارہ اور مصنف پیٹی اسمتھ جنہوں نے موسیقی کی دنیا میں بڑی کامیابیوں کے باوجود کبھی گریمی ایوارڈ حاصل نہیں کیا قابل ذکر ہیں۔

یاد رہے کہ جمی کارٹر 2007 میں بھی آڈیو کیٹیگری کا ایوارڈ جیت چکے ہیں۔ کارٹر کو یہ ایوارڈ ان کی کتاب "Our Endangered Values: America's Moral Crisis" کے صوتی البم پر دیا گیا تھا۔ اس کتاب میں انہوں نے اپنی سیاسی آراء پیش کی ہیں۔