.

پاناما میں حزب اللہ کے لیے منی لانڈرنگ پر لبنانی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لاطینی امریکا کے ملک پاناما میں ایک مشتبہ لبنانی کو شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے لیے کالے دھن کو سفید کرنے اور منشیات کی اسمگلنگ کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

امریکی کانگریس نے حال ہی میں حزب اللہ کے معاشی ومالی مقاطعے کے لیے قراردادیں منظور کی ہیں اور اس شیعہ جنگجو گروپ کی مالی معاونت کرنے والوں کی گرفتاریاں کی جارہی ہیں،ان کے امریکا میں موجود اثاثے منجمد کیے جارہے ہیں اور امریکیوں پر دنیا میں کہیں بھی حزب اللہ کے وابستگان کے ساتھ لین دین پر پابندی عاید ہے۔

واضح رہے کہ منشیات کے اسمگلر مبینہ طور پر حزب اللہ کے زیر قبضہ بندرگاہوں اور بد امنی کا شکار شام کے ذریعے لبنان سے اپنی بھںگ کی پیدوار کو بیرون ملک پہنچاتے ہیں۔ایک رپورٹ کے مطابق لبنان سے منشیات کی بھاری مقدار اردن میں پہنچائی جاتی رہی ہے۔ یادرہے کہ حشیش کی کاشت نے لبنان میں سنہ 1975ء سے 1990ء تک خانہ جنگی کے زمانے میں ایک کاروبار کی شکل اختیار کر لی تھی اور اس کی فروخت سے لبنانیوں نے کروڑوں ڈالرز کمائے تھے۔