.

امریکا :ایران کو خطرناک دھات کا برآمد کنندہ شخص گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں حکام نے ایک شخص کو ایران کو خطرناک دھاتی پاؤڈر برآمد کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔ امریکی محکمہ انصاف نے اس گرفتاری کی اطلاع دی ہے اور بتایا ہے کہ اس خطرناک پاؤڈر کو میزائلوں کی تیار سمیت فضائی اور جوہری سرگرمیوں میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔

گرفتار شخص کا نام ایردل کیومچو ہے،اس کی عمر چوالیس سال ہے اور اس کو نیویارک کی ایک عدالت میں پیش کیا جانے والا تھا۔اس پر عاید کردہ الزامات ثابت ہوجاتے ہیں تو اس کو بیس سال تک قید اور دس لاکھ ڈالرز جرمانے کی سزا سنائی جاسکتی ہے۔

امریکی محکمہ انصاف کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق ملزم نے گلوبل میٹلرجی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) کی حیثیت سے مبینہ طور پر کوبالٹ ،نِکل دھاتی پاؤڈر دو مرتبہ ایران کو برآمد کیا تھا۔یہ مواد پہلے ایک اور شخص کے ذریعے ترکی بھیجا گیا تھا تاکہ اس کی حتمی جائے منزل کو چھپایا جاسکے۔

اس نے مبینہ طور پر ایک ہزار پاؤنڈز( نصف ٹن) سے زیادہ دھاتی مواد ایران کو بھیجنے کی کوشش کی تھی۔امریکی قانون کے تحت محکمہ خزانہ کے دفتر برائے خارجہ اثاثے کنٹرول سے لائسنس کے بغیر اس طرح کا پاؤڈر ایران کو برآمد کرنا غیر قانونی ہے۔

نیویارک کے مشرقی ضلع کے اٹارنی رابرٹ کیپرس کا کہنا ہے کہ ''جو لوگ خفیہ طریقوں سے ریگولیٹری اداروں سے بچنے کی کوشش کررہے ہیں،وہ ہماری قومی سلامتی اور بیرون ملک ہمارے اتحادیوں کے لیے خطرے کا موجب ہیں''۔