.

انڈونیشیا میں 7.9 کی شدت کا زلزلہ ،ہلاکتوں کی اطلاع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

انڈونیشیا کے جزیرے سماٹرا کے ساحلی علاقے میں بدھ کو شدید زلزلہ آیا ہے۔ریختر اسکیل پر زلزلے کی شدت 7.9 تھی۔ابتدائی اطلاعات کے مطابق اس سے ہلاکتیں ہوئی ہیں لیکن فوری طور پر ان کی حتمی تعداد معلوم نہیں ہوسکی ہے۔

اس زلزلے کے بعد انڈونیشیا میں سونامی الرٹ جاری کیا گیا تھا لیکن اس کو واپس لے لیا گیا ہے۔آسٹریلیا کے مغربی ساحلی علاقوں میں بھی جاری کردہ سونامی کے انتباہ کو منسوخ کردیا گیا ہے۔

انڈونیشیا کی نیشنل سرچ اینڈ ریسکیو ایجنسی کے نائب سربراہ ہرنیمس گرو نے کہا ہے کہ زلزلے سے بعض ہلاکتیں ہوئی ہیں لیکن انھوں نے ان کی تعداد کے بارے میں لاعلمی ظاہر کی ہے۔زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں رات کی تاریکی کی وجہ سے امدادی سرگرمیوں معطل کردی گئی ہیں۔

امریکی جیالوجیکل سروے نے پہلے اس زلزلے کی شدت 8.2 بتائی تھی،پھر 8.1 اور تیسری مرتبہ کم کرکے 7.9 بتائی ہے۔زلزلے کا مرکز پڈانگ شہر سے 808 کلومیٹر جنوب مغرب میں تھا اور اس کی دس کلومیٹر گہرائی تھی۔

انڈونیشیا کی نیشنل میٹرولوجیکل ایجنسی کے ایک عہدے دار آندی ایکا سکایا نے چینل ٹی وی ون کو بتایا ہے کہ ''ابھی تک کسی تباہ کاری کی کوئی اطلاع نہیں ہے اور سماٹرا کے جنوب مغربی ساحلی علاقے میں واقع بنگ کلو میں اس کے جھٹکے محسوس نہیں کیے گئے ہیں''۔

انڈونیشی صدر جوکو ودودو شمالی سماٹرا کے شہر میدان میں ایک ہوٹل میں مقیم ہیں اور محفوظ ہیں۔میدان کے ایک مکین نے بتایا ہے کہ انھوں نے زلزلے کے کوئی جھٹکے محسوس نہیں کیے ہیں۔

مقامی چینل کمپاس ٹی وی کے مطابق زلزلے کے بعد پڈانگ شہر میں اسپتالوں سے مریضوں کو منتقل کیا جارہا تھا۔زلزلے سے پڈانگ کے مکینوں میں افراتفری پھیل گئی اور وہ ادھر ادھر بھاگنا شروع ہوگئے جس سے ٹریفک جام ہوگیا۔

یادرہے کہ دسمبر 2004ء میں انڈونیشیا کا صوبہ آچے 9.5 کی شدت کے زلزلے کے نتیجے میں بحر ہند میں سونامی طوفان سے بری طرح متاثر ہوا تھا۔سمندر میں 17.4 میٹر بلند لہریں بلند ہوئی تھیں۔اس سمندری طوفان سے دس بارہ ممالک متاثر ہوئے تھے اور بعض بستیاں چند سیکنڈز ہی میں ملیا میٹ ہوگئی تھیں۔صرف صوبہ آچے میں زلزلے اور سونامی طوفان سے 126741 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔