.

ملازمتوں کو ''سعودیانے'' کے نئے پروگرام کا اجراء

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر محنت مفرج آل حقبانی نے اپنی نگرانی میں مختلف شعبوں میں ملازمتوں اور کاروباروں کو سعودیانے کا نیا پروگرام شروع کرنے کی ہدایت کی ہے۔اس کو ''رہ نما مقامیت'' کا نام دیا گیا ہے۔

آل حقبانی نے ملازمت کے شعبے کے لیڈروں پر زوردیا ہے کہ وہ اس پروگرام کے لیے ہر طرح کی معاونت کریں۔اس کا مقاصد سعودیانے کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنا اور بعض شعبوں خاص طور پر پرچون کے شعبے میں جزوی سعود کاری ہے۔

اس پروگرام کے چار مراحل ہیں۔پہلا مرحلہ شعبہ جاتی منصوبہ بندی سے متعلق ہے،اس کے تحت وزارت محنت اہدافی شعبوں کے ساتھ مل کر سعودیانے کے منصوبے پر کام کرے گی۔اس کے تحت نجی شعبے میں اعلیٰ مہارت اور نیم مہارت کی حامل ملازمتوں پر غیرملکیوں کی جگہ سعودیوں کو مقرر کرنے کے لیے کام کیا جائے گا۔

دوسرا مرحلہ علاقائی مداخلت سے متعلق ہے۔اس کے تحت صوبائی گورنریوں میں سعودیانے کے پروگرام کی معاونت کی جائے گی اور صوبوں کے امیروں (گورنروں) کی مدد وحمایت سے ہر صوبے میں اس کی ضروریات کے مطابق سرگرمیاں وضع کی جائیں گی۔

تیسرا مرحلہ بعض کاروباروں کو مکمل طور پر سعودیانے سے متعلق ہے۔اس کا آغاز دوسری وزارتوں سے مل کر کیا جائے گا اور سب سے پہلے موبائل فونز کی فروخت اور مرمت کے کام کو سعودی افراد کے سپرد کیا جائے گا۔

چوتھا مرحلہ ''متوازن نطاقت پروگرام'' کو مربوط بنانے سے متعلق ہے۔اس کو وزارت محنت بہت جلد ''رہ نما مقامیت پروگرام'' کے ساتھ شروع کرے گی۔