.

برسلز : فائرنگ کی جگہ سے داعش کا جھنڈا برآمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بیلجیئم کے دارالحکومت برسلز میں پولیس کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں ہلاک ہونے والے شخص کی لاش کے پاس عراق اور شام میں برسرپیکار سخت گیر جنگجو گروپ داعش کا جھنڈا، ایک کلاشنکوف رائفل اور سلفی لٹریچر پر مبنی ایک کتاب ملی ہے۔

بیلجیئم کے انسداد دہشت گردی پراسیکیوٹر کے ترجمان تھیری ورٹس نے بدھ کے روز پریس کانفرنس میں بتایا ہے کہ ''اس شخص کی شناخت بالقید محمد کے نام سے ہوئی ہے۔وہ الجزائری شہری تھا،اس کی عمر پینتیس سال تھی اور وہ بیلجیئم میں غیر قانونی طور پر رہ رہا تھا''۔

ترجمان نے کہا کہ ''اس کی لاش کے ساتھ ایک کلاشنکوف ،سلفیت پر ایک کتاب اور داعش کا ایک پرچم ملا ہے''۔اس الجزائری کو پولیس کے ماہر نشانہ بازوں نے منگل کے روز ایک عمارت میں ہلاک کردیا تھا۔اس سے پہلے جب پولیس نے معمول کی چھاپا مار کارروائی کی تو وہاں موجود اس کے علاوہ اس کے ساتھیوں نے فائرنگ کردی تھی اور پھر پولیس اور ان کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا تھا۔

ورٹس کا کہنا تھا کہ فلیٹ میں ممکنہ طور پر دو اور افراد موجود تھے اور وہ موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے تھے۔ان کی شناخت معلوم نہیں ہوسکی اور اب ان کا پیچھا کیا جارہا ہے مگر برسلز کے جنوبی علاقے میں تلاشی کی کارروائی کے دوران ان کا کچھ اتا پتا معلوم نہیں ہوسکا ہے۔

بیلجیئم کے وزیر اعظم چارلس مشعل کا کہنا ہے کہ برسلز میں فائرنگ کے واقعے کے بعد سے پولیس کی ایک بڑی کارروائی جاری ہے۔ان مشتبہ افراد کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں چار پولیس اہلکار معمولی زخمی ہوئے تھے۔