.

آٹھ لاکھ پناہ گزین لیبیا سے یورپ داخلے کے لیے تیار ہیں: فرانس

’پناہ گزینوں کی آمد روکنے کے لیے لیبیا میں مستحکم حکومت ناگزیر‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی حکومت نے دعویٰ کیا ہے کہ ایک ایسے وقت میں جب کہ #یورپ میں بدامنی کے واقعات کے بعد پناہ گزینوں کی آمد کے لیے دروازے بند ہوتے جا رہے ہیں #لیبیا میں آٹھ لاکھ افراد یورپ داخلے کے لیے پرتول رہےہیں۔

فرانسیسی وزیردفاع جان ایف لوڈریان نے جمعرات کو اپنے ایک بیان میں کہا کہ لیبیا میں آٹھ لاکھ مہاجر یورپ داخل ہونے کی تیاری کررہے ہیں۔

فرانسیسی ریڈیو ’’یورپ 1‘‘ سے بات کرتے ہوئے وزیر دفاع نے کہا کہ لیبیا سے یورپ میں پناہ گزینوں کی آمد کا سلسلہ جب شروع ہوا تو ان کی تعداد محض ہزار سو تھی مگر اس وقت لیبیا میں لاکھوں افراد یورپ میں داخل ہونے کی تیاری کررہے ہیں۔

صحافی نے فرانسیسی وزیر سے ان کے دعوے کی تصدیق بابت دوبارہ پوچھا کہ آیا ان کے پاس لیبیا میں آٹھ لاکھ پناہ گزینوں کی موجودگی کے اعدادو شمار حقیقی ہیں تو ان کا کہنا تھا کہ’میری دانست میں یہ تعداد حقیقی ہے‘۔

فرانسیسی وزیردفاع جان ایف لوڈریان نے کہا کہ ’’ہمیں #داعش کے لیے مالی وسائل کا ذریعہ بننے سے روکنے کےلیے پناہ گزینوں کے معاملے کو جلد ازجلد نمٹنا چاہیے۔ یہی وجہ ہےکہ ہم یورپی ممالک سے پرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ لیبیا میں متحدہ قومی حکومت کی تشکیل میں معاونت کرے جو لیبیا کے ساحل سے فرار ہونے والے پناہ گزینون کی روک تھام کرسکے۔ اس مشن کے لیے انہوں نے جون 2015ء کے دوران ’صوفیا آپریشن‘‘ کی مثال دی جس میں 22 یورپی ممالک نے ملک کرحصہ لیا تھا۔

خیال رہے کہ صوفیا آپریشن جونا 2015ء میں شروع کیا گیا تھا جس کا مقصد لیبیا اور دوسرے ملکوں سے آنے والے بحری جہازوں کی تلاشی لینا اور انسانی اسمگلروں کو پناہ گزینوں کو یورپ لانے سے روکنا تھا۔ اگرچہ ابھی لیبیا سے دور عالمی سمندری حدود میں ایسا کوئی جہاز نہیں پکڑا جاسکا ہے۔

فرانسیسی وزیر دفاع نےکہا کہ لیبیا میں امن و استحکام اور وہاں سے #مہاجرین کی یورپ منتقلی روکنے کے لیے قومی حکومت کی تشکیل ناگزیر ہے۔ امید ہے کہ یہ حکومت جلد ہی تشکیل پا جائے مگر اس کے لیے علاقائی طاقتوں کو بھی متحرک ہونا پڑے گا۔ ان کا اشارہ مصر، قطر اور ترکی کی جانب تھا جو بہ قول ان کے لیبیا میں مل کر مستحکم حکومت کے قیام میں مدد دے سکتے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں جان ایف لوڈریان کا کہنا تھا کہ لیبیا میں مستحکم قومی حکومت کی تشکیل کے بعد عالمی برادری لیبیا میں موجود تین بڑے خطرات سے نمٹنے کے لیے اپنی کارروائی شروع کرے۔ لیبیا میں موجود داعش کے 4 سے5 ہزار جنگجوؤں کو ختم کرے، انسانی اسلگلنگ کا دھند بند کرائے اور اسلحہ کی ترسیل رکوائے۔