.

’داعش نے تدمر میں تاریخی مورتیوں کے سرتوڑ دیے‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

#شام کے تاریخی شہر #تدمر پر 10 ماہ تک قبضہ کرنے والی دہشت گرد تنظیم دولت اسلامی ’’داعش‘‘ نے اس شہر کی اینٹ سے اینٹ بجانے کی پوری کوشش کی ہے۔ شہر کے مرکزی نیشنل میوزیم میں رکھی گئی تاریخی مورتیوں کے سر توڑ دیے گئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق غیرملکی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ تدمر پر #داعش کے قبضے سے پہلے اور بعد کی تصاویر میں نمایاں فرق موجود ہے۔ داعش نے آثار قدیمہ کے تاریخی خزانے کی بری طرح توڑپھوڑ کی ہے۔ میوزیم میں بڑی تعداد رکھی مورتیوں میں سے بیشتر کو توڑ دیا گیا ہے۔ جب کہ تمام مورتیوں کے سر ہتھوڑوں کی مدد سے توڑے گئے ہیں۔

خیال رہے کہ دولت اسلامی ’’داعش‘‘ نے 10 ماہ تک تاریخی شہر تدمر پر قبضہ کیے رکھا تا آنکہ شام کی سرکاری فوج نے روسی فوج کی معاونت سے 27 مارچ کو داعش سے اس شہر کا قبضہ چھڑا لیا تھا۔

ذیل میں دی گئی تصاویر سے داعش کے ہاتھوں میوزیم میں ہونے والی تباہی کے مناظر کی چند جھلکیاں دیکھی جاسکتی ہیں۔