.

خلیجی ممالک یمنی قوم کے نجات دہندہ ہیں: جنرل الاحمر

یمنی قوم خلیج تعاون کونسل کی احسان فراموشی نہیں کرے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

#یمن کے نو منتخب نائب صدر جنرل علی #محسن_الاحمر نے خلیج تعاون کونسل کے رکن ممالک کی جانب سے یمن میں جاری بغاوت ناکام بنانے کے لیے کی جانے والی کوششوں اور امداد کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ یمنی قوم خلیجی بھائیوں کے احسانات کو کبھی فراموش نہیں کرسکے گی۔

یمن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ’سبا‘ نے جنرل الاحمر کا ایک تازہ بیان نقل کیا ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ #خلیج_تعاون_کونسل یمنی قوم کے لیے نجات دہندہ ہے۔ یہ خلیجی ملکوں کی مساعی اور قربانیوں کا نتیجہ ہے کہ یمنی قوم تاریک ماضی سے نکل کر روشن مستقبل کی طرف بڑھنے لگے ہیں۔

نو منتخب نائب صدر کا کہنا تھا کہ یمن کو ایک اکائی میں متحد رکھنے، یمنی قوم کے لیے عدل و انصاف کویقینی بنانے، معاشرے کو مظالم کی دلدل سے نکالنے بالخصوص جنوبی یمن کے تنازع کے حل میں خلیجی ممالک نے موثر کردار ادا کرکے یمنی قوم پر بڑا احسان کیا ہے۔

جنرل علی محسن الاحمر نے توقع ظاہر کی کہ ملک میں امن وامان کا جلد بول بالا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ یمنی عوام ملک میں امن وامان کے قیام کے حوالے سے سلامتی کونسل کی قرارداد 2216 پر عمل درآمد میں کسی قسم کی جانب داری کا مظاہرہ نہیں کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ خلیجی ممالک نے یمن کو بکھرنے سے بچالیا۔ توقع ہے کہ آنے والے مرحلے میں یمن کی معاشی ترقی اور اس کی تعمیر نو میں بھی خلیجی ممالک اپنا تعاون جاری رکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ #سعودی_عرب کی قیادت میں عرب ممالک نے یمن میں غیرمعمولی کامیابیاں حاصل کی ہیں۔ یمنی قوم خلیجی بھائیوں کے احسانات کو کبھی فراموش نہیں کریں گے۔

خیال رہے کہ یمن کے صدر عبد ربہ #منصور_ھادی نے گذشتہ روز اپنی کابینہ میں اہم تبدیلیاں کرتے ہوئے #خالد_بحاح کو نائب صدر اور وزارت عظمیٰ کے عہدوں سے ہٹا دیا تھا۔ انہوں نے جنرل علی محسن الاحمر کو نائب صدر اور احمد عبید بن دغر کو وزارت عظمیٰ کے قلم دان سونپے ہیں جب کہ سابق سبکدوش خالد بحاح کو صدر کا خصوصی مشیر مقرر کیا گیا ہے۔