.

فرانس: خاتون دکان دار نے مسلح لٹیرے کو مار بھگایا 7

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس میں گزشتہ ہفتے ایک خاتون شہری نے بہادری اور دلیری کا ایسا نایاب نمونہ پیش کیا جو بعض مرتبہ مردوں کی جانب سے بھی کم دیکھنے میں آتا ہے۔ سیکورٹی کیمرے کی آنکھ میں محفوظ ہوجانے والے کلپ کو فرانس کے میڈیا نے بھی سنجیدگی سے لیتے ہوئے اس بہادر خاتون کے کارنامے سے متعلق رپورٹیں نشر کی ہیں۔

"نیتالی لوکیرک پیلن" نامی خاتون فرانس کے شمال میں واقع ایک گاؤں Champ-du-Boult میں رہتی ہے۔ پیلن ایک دکان چلاتی ہے جہاں مختلف اشیاء فروخت ہوتی ہیں۔ گزشتہ جمعے کی شب ساڑھے دس بجے ایک نقاب پوش مسلح شخص پیلن کی دکان میں گھس آیا جس کے دائیں ہاتھ میں پستول اور بائیں ہاتھ میں ایک بیگ تھا۔

نقاب پوش نے دھاڑتے ہوئے پیلن سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنے پاس موجود تمام نقدی مسلح شخص کے بیگ میں رکھ دے۔ فرانسیسی روزنامے "لی فیگارو" کے مطابق پیلن نے اس مطالبے کو یکسر نظرانداز کرتے ہوئے جواب دیا کہ "بیوقوف انسان یہ دکان ہے بینک نہیں"۔ اس کے بعد پیلن کیش بکس میں سے نقدی لانے کے بجائے اپنی گود میں موجود ننھے بچے کو دکان میں کسی محفوظ جگہ رکھ کر پھر سے نقاب پوش کے پاس چلی آئی۔

اس کے بعد ہم وڈیو کلپ میں دیکھتے ہیں کہ پیلن نے لٹیرے کا بیگ چھین کر اس سے چلے جانے کا مطالبہ کیا۔ اس موقع پر منظر میں دائیں جانب نظر آنے والا ایک گاہک انتہائی سرمہری کے ساتھ بنا کسی حرکت کے اپنی جگہ ساکت کھڑا رہا جب کہ مسلح لٹیرے نے اس کے چہرے کے نزدیک پستول لے جا کر کئی بار اسے دھمکایا تھا۔ پیلن نے اپنے ہاتھ میں موجود بیگ کی مدد سے لٹیرے کو مار بھگانے کی کوشش کی۔ اس دوران دکان میں موجود ایک اور گاہن اپنے ہاتھوں میں کرسی اٹھا کر پیلن کی مدد کے لیے لٹیرے کی جانب آگیا۔ لٹیرے نے گھبرا کر دو فائر کھول دیے مگر کوئی بھی اس کی زد میں نہیں آیا۔ ادھر ساکت شخص بدستور اپنی جگہ پر کھڑا رہا گویا کہ اس تمام صورت حال سے اس کا کوئی تعلق نہیں۔

پیلن نے بھانپ لیا کہ لٹیرے کو خطرے کا احساس ہورہا ہے جس پر پیلن نے بیگ اور ہاتھوں سے کے ذریعے لٹیرے پر تابڑ توڑ حملے شروع کردیے۔ لٹیرا پیچھے ہٹتا رہا یہاں تک کہ رات کے اندھیرے میں دکان سے فرار ہوگیا۔ اس کے بعد ہم دیکھتے ہیں کہ ٹھنڈے اعصاب والا ساکت گاہک مشکوک انداز سے دکان کے اندر حرکت میں آیا جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ لٹیرے کا ساتھی تھا۔

تاہم پیلن نے ایک فرانسیسی چینل سے گفتگو میں (جس کی وڈیو "العربیہ ڈاٹ نیٹ بھی پیش کررہا ہے)، تصدیق کی کہ وہ ساکت کھڑے نظر آنے والے گاہک کو جانتی ہے۔ جہاں تک لٹیرے کا تعلق ہے توDetective نیوز ویب سائٹ کے مطابق پولیس نے اگلے روز اس کو گرفتار کرلیا۔ 21 سالہ گرفتار شدہ شخص کا نام اور شہریت نہیں بتائی گئی۔