.

ترکی: معزول یمنی صدر علی عبداللہ صالح کے اثاثے منجمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کی حکومت نے جمعرات کے روز بتایا ہے کہ اس نے سلامتی کونسل کے فیصلے کے مطابق معزول یمنی صدر علی عبداللہ صالح کے اثاثوں کو منجمد کر دیا ہے۔ اس بات کا اعلان ترک حکومت کے سرکاری اخبار میں کیا گیا۔

حکومت کے مطابق اس نے ترکی کے بینکوں اور دیگر مالیاتی اداروں میں صالح کے تمام اثاثوں کو منجمد کر دیا ہے جن میں لاکرز بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی جانب سے مقرر کردہ تحقیق کاروں نے سلامتی کونسل کو اس بات سے آگاہ کیا تھا کہ انہیں یہ شک ہے کہ صالح کی طویل حکمرانی کے دوران ان کی دولت کا حجم تقریبا 60 ارب ڈالر تک پہنچ گیا ہے (جو یمن کی سالانہ مجموعی مقامی پیداوار کے برابر ہے) اور وہ 2014 میں اقتدار پر قبضے کی منصوبہ بندی میں بھی شریک رہے۔