.

ترک فورسز اور کرد باغیوں میں جھڑپیں ، سات ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کے جنوب مشرقی علاقے میں علاحدگی پسند کردستان ورکرز پارٹی ( پی کے کے) کے جنگجوؤں نے راکٹ لانچروں اور آتشیں رائفلوں سے فوج کی ایک چوکی پر حملہ کیا ہے جس کے بعد جھڑپ میں دو فوجی اور پانچ کرد باغی ہلاک ہوگئے ہیں۔

ترکی کی مسلح افواج نے منگل کے روز ایک بیان میں بتایا ہے کہ کرد باغیوں نے عراق اور ایران کی سرحد کے ساتھ واقع صوبے حکاری کے ضلع سمدنلی میں فوجی چوکی پر حملہ کیا تھا۔

ترکی کے جنوب مشرقی علاقوں میں گذشتہ سال جولائی سے کرد باغیوں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں اور ان میں اب تک ہزاروں کرد باغی اور سیکڑوں فوجی اور پولیس اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔

پی کے کے کے جنگجو 1984ء سے ترک حکومت کے خلاف کرد اکثریتی علاقوں کی علاحدگی کے لیے مسلح تحریک چلا رہے ہیں اور اس تحریک میں چالیس ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ ترکی نے پی کے کے کو کالعدم اور دہشت گرد قرار دے رکھا ہے۔