جان کیسیچ دستبردار؟ شعلہ بیان ٹرمپ کے لیے میدان صاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا کی ریاست اوہائیو کے گورنر جان کیسیچ نے اپنی صدارتی مہم معطل کردی ہے اور وہ ری پبلکن پارٹی کی جانب سے صدارتی امیدوار کے طور پر نامزدگی کے لیے دوڑ سے باہر ہوگئے ہیں۔ان کے اس فیصلے کے بعد نیویارک سے تعلق رکھنے والے شعلہ بیان ڈونلڈ ٹرمپ کے لیے میدان صاف ہوگیا ہے اور وہ یقینی طور پر ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار نامزد ہوجائیں گے۔

امریکی ٹیلی ویژن چینل این بی سی کی رپورٹ کے مطابق کیسیچ نے بدھ کو ورجینیا میں میڈیا سے گفتگو معطل کردی ہے۔انھوں نے کولمبس، اوہائیو میں بھی ایک جلسے میں شرکت معطل کردی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے منگل کی شب انڈیانا میں ری پبلکن پارٹی کے پرائمری انتخاب میں فیصلہ کن فتح حاصل کی تھی۔اس کے بعد ان کے قریبی حریف امیدوار ٹیڈ کروز نے اپنی مہم معطل کردی تھی۔ان کے فیصلے پر یہ قیاس آرائی کی گئی تھی کہ تیسرے نمبر پر امیدوار کیسیچ بھی صدارتی مہم سے دستبردار ہوجائیں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی حالیہ کامیابیوں سے یہ واضح ہوگیا ہے کہ وہ 8 نومبر کو ہونے والے صدارتی انتخابات میں ڈیمو کریٹک پارٹی کی امیدوار ہلیری کلنٹن کے مدمقابل ہوں گے۔ہلیری ریاست انڈیانا میں اپنے قریبی حریف سینیٹر برنئی سینڈرس کے مقابلے میں شکست کھا گئی تھیں لیکن اس ہار کے باوجود وہ اپنی جماعت کی نامزدگی کے حصول میں کامیاب ہوجائیں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں