.

روس کا دہشت گردی کے بڑے حملوں کو ناکام بنانے کا دعویٰ

ترکی اور شام میں فعال عالمی تنظیموں کے لیڈروں نے حملوں کے احکام جاری کیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس کے سراغرساں ادارے ایف ایس بی نے شام اور ترکی میں فعال عالمی دہشت گرد تنظیموں کے متعدد حملوں کو ناکام بنانے کا دعویٰ کیا ہے اور کہا ہے کہ اس سلسلے میں متعدد مشتبہ افراد کو گرفتارکر لیا گیا ہے۔

روس کی سرکاری خبررساں ایجنسی ریا نووستی نے ایف ایس بی کے ایک بیان کے حوالے سے بتایا ہے کہ ''وسط ایشیا کے ممالک سے تعلق رکھنے والے تارکین وطن کا ایک گروپ ماسکو کے علاقے میں دہشت گردی کی کارروائیوں کی منصوبہ بندی کررہا تھا،اس گروپ کے متعدد مشتبہ ارکان کو گرفتار کر لیا گیا ہے''۔

ایف ایس بی نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے یہ حملے مئی کے اوائل میں کیے جانے تھے اور شام اور ترکی میں فعال دہشت گرد تنظیموں کے لیڈروں نے ان حملوں کے احکام جاری کیے تھے۔روسی ایجنسی نے ان تنظیموں کا نام نہیں بتایا ہے۔

ماسکو اور اس کے نواح میں یکم مئی کو محنت کشوں کے عالمی دن کے موقع پر متعدد ثقافتی اور سیاسی پروگرام منعقد کیے گئے تھے۔ان کے علاوہ روس کے آرتھوڈکس چرچ نے بھی یکم مئی ہی کو ایسٹر کی تقریبات کا انعقاد کیا تھا۔

9 مئی کو روسی دارالحکومت میں دوسری عالمی جنگ میں نازی جرمنی کے خلاف فتح کی سالگرہ کے موقع پر ایک بڑا فوجی میلہ منعقد کیا جاتا ہے اور اس میں ہزاروں لوگ شرکت کرتے ہیں۔اس موقع پر فوجی آلات اور سازوسامان کی نمائش منعقد کی جاتی ہے۔

ایف ایس بی کے بیان کے مطابق ان مشتبہ افراد کو ماسکو سے گرفتار کیا گیا تھا اور ان کے قبضے سے ہتھیار اور دھماکا خیز مواد بھی برآمد ہوا ہے۔تاہم بیان میں ان گرفتاریوں کی تاریخ نہیں بتائی گئی ہے۔البتہ یہ کہا گیا ہے کہ ''زیرحراست افراد اقبالِ جُرم کرنے والے ہیں''۔

روس کی جانب سے یہ اعلان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب شام کے شمالی شہر حلب میں ماسکو کی حمایت یافتہ اسدی فوج اور ترکی کے حمایت یافتہ شامی باغیوں کے درمیان 22 اپریل سے خونریز لڑائی جاری ہے اور سفارتی کوششوں کے باوجود اس لڑائی کو بند نہیں کرایا جا سکا ہے۔

روس اپنے اتحادی شامی صدر بشارالاسد کی وفادار فوج کی باغیوں کے خلاف جنگ میں مالی، سیاسی اور عسکری معاونت کررہا ہے۔روسی لڑاکا طیاروں کی فضائی مدد کی بدولت ہی شامی فوج تاریخی شہر تدمر میں داعش کے جنگجوؤں کو شکست دینے میں کامیاب ہوئی تھی اور اب وہ حلب میں بھی شامی فوج کی حمایت میں باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں پر فضائی حملے کررہے ہیں۔