شام میں لڑتے ہوئے ایک اور روسی فوجی کی ہلاکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام کے وسطی صوبے حمص میں باغیوں کے ساتھ لڑائی کے دوران ایک روسی فوجی مارا گیا ہے۔

روس کی انٹرفیکس نیوز ایجنسی کی اطلاع کے مطابق اس فوجی کا نام انتون یرجین ہے اور وہ حمص میں روسی رابطہ مرکز کی گاڑیوں کے ساتھ سفر کے دوران باغیوں کی فائرنگ کی زد میں آ گیا تھا اور شدید زخمی ہو گیا تھا۔روس کا یہ رابطہ مرکز شام کے متحارب دھڑوں کے درمیان مبینہ طور پر ثالثی کا کردار ادا کررہا ہے۔

ایک روسی عہدے دار کے مطابق ایک فوجی اسپتال میں ڈاکٹر دو روز تک اس روسی فوجی کی زندگی بچانے کی کوشش کرتے رہے تھے لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گیا ہے۔تاہم اس نے یہ نہیں بتایا ہے کہ اس فوجی پر کب حملہ کیا گیا تھا اور اس کی موت کب واقع ہوئی تھی؟

اس فوجی کو اب بعد از مرگ روسی اعزاز سے نوازا جائے گا۔اس کی موت کی خبر منظرعام پر آنے سے سات روز قبل تدمر میں لڑائی میں ہلاک ہونے والے روس کی اسپیشل فورسز کے ایک افسر کی میت پانچ مئی کو واپس ماسکو بھیجی گئی تھی اور اس کی پورے فوجی اعزاز کے ساتھ آخری رسومات ادا کی گئی تھیں۔

واضح رہے کہ روسی فوجی اور کمانڈوز شام میں صدر بشارالاسد کی وفادار فوج کے شانہ بشانہ باغی گروپوں کے خلاف لڑرہے ہیں اور میدان جنگ میں اسدی فوج کی رہ نمائی بھی کررہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں