"داعش" کو غیرمسبوق مالی بحران کا سامنا ہے : امریکی جریدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی جریدے "فارن پالیسی" میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکا کے زیرقیادت بین الاقوامی اتحاد کے حملوں کے نتیجے میں عراق اور شام میں داعش تنظیم کے مالی ذرائع پر بڑی حد تک روک لگانے میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔

رپورٹ میں باور کرایا گیا ہے کہ "داعش" کو غیرمسبوق نوعیت کے مالی بحران کا سامنا ہے۔ بحران اس حد تک سنگین ہوچکا ہے کہ تنظیم کے لیے اپنے جنجگوؤں کو تنخواہوں کی ادائیگی بھی ممکن نہیں رہی۔ اس کے نتیجے میں تنظیم اپنی قیادت اور جنگجوؤں کی تنخواہوں کو آدھا کردینے پر مجبور ہوگئی۔

اس دوران کسی قدر تصدیق شدہ معلومات سے ظاہر ہوا ہے کہ "داعش" کی قیادت تنظیم کے بجٹ میں بدعنوانی اور چوری میں ملوث رہی ہے جس کا مقصد اپنے مالی خسارے اور تنگی کو پورا کرنا تھا۔

اسی سلسلے میں جریدے نے داعش کے زیرکنٹرول علاقوں میں چھوٹی دکانوں اور تجارتی مراکز کے مالکان کے حوالے سے بتایا کہ تنظیم نے ٹیکسوں کی شرح میں بھی اضافہ کردیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں