.

سیاہ فام امریکی کی ’قاتل‘ پستول کی 6.5 کروڑ ڈالر کی بولی!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں سنہ 2012ء کو ایک سیاہ فام لڑکے ٹریون مارٹن کے قتل میں استعمال کی گئی جارج زیمرمین کی پستول کی آن لائن نیلامی میں قیمت 65 ملین ڈالر تک جا پہنچی ہے۔

غیرملکی خبر رساں اداروں کے مطابق امریکا میں سیاہ فام امریکی لڑکے کے قتل کے لیے استعمال کی گئی پستول کو "یونائٹیڈ جان گروپ ڈاٹ کام" نامی ویب سائیٹ کو آن لائن نیلامی کے لیے پیش کیا۔ جمعہ کی شام تک نیلامی میں راشیسٹ ماکچوفیٹچ جیسے گمنام اور فرضی بروکروں نے حصہ لیتے ہوئے پستول کی قیمت 65 ملین ڈالر تک پہنچا دی۔ حالانکہ اس پستول کی عام مارکیٹ میں قیمت پانچ ہزار ڈالر سے زیادہ نہیں ہے۔

خیال رہے کہ سنہ 2012ء کو امریکا میں ایک سیاہ فام نوجوان لڑکے سترہ سالہ ٹریفن مارٹن کے قتل کے بعد اس کے قاتل زیمرمین پر انسانی حقوق کے حلقوں کی جانب سے کڑی تنقید کی گئی تھی۔ زیمزمین کو مارٹن کے قتل میں گرفتار تو کیا گیا تھا مگر عدالتوں نے اسے بری قرار دے کر رہا کردیا تھا۔

نو ملی میٹر دھانے والے "کیل ۔ ٹیک بی ایف" نامی پستول اپنے دفاع اور دُشمن کے وحشیانہ کے خلاف ایک بہترین اور موثر ہتھیار ہے۔

پستول کی نیلامی جمعرات کو شروع ہوئی تھی جو دو روز میں 65 ملین ڈالر کی قیمت تک جا پہنچی ہے۔ قبل ازیں جان بروکر ڈاٹ کام نامی ویب سائیٹ نے سیاہ فام امریکی کی جان لینے والی پستول کی فروخت کی ذمہ داری لینے سے انکار کردیا تھا۔

بعد ازاں یہ پستول یونائیٹیڈ جان گروپ ڈاٹ کام نے پانچ ہزار ڈالر کی قیمت سے عام نیلامی کے لیے پیش کی تھی۔

مقتول مارٹن کے اہل خانہ کے وکیل نے پستول کی نیلامی کو شرمناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس طرح کے اقدامات سے مسلح تشدد کی حوصلہ افزائی ہوگی۔