حزب اللہ نے لبنان کی سلامتی داؤ پرلگا دی: یو این

شام کی جنگ میں حزب اللہ کی شمولیت خطرناک قرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کے لبنان میں متعین مندوب نے خبردار کیا ہے کہ شیعہ ملیشیا حزب اللہ کی شام کی جنگ میں بشارالاسد کی حمایت میں لڑنے کے باعث لبنان کی قومی سلامتی بھی شدید خطرات سے دوچار ہو گئی ہے۔

العربیہ ٹی وی کے مطابق رواں ماہ سبکدوشی کا اعلان کرنے والے یو این مندوب ٹیری روڈ لارسن نے سنہ 2004ء میں منظور کردہ قرارداد 1559 پرعمل درآمد نہ کیے جانے پر بھی سخت تنبیہ کی۔ ان کا کہنا تھا کہ عراق سے فرقہ واریت کے جراثیم لبنان منتقل ہو رہے ہیں۔

سبکدوشی سے قبل اقوام متحدہ کے اجلاس میں پیش کی گئی اپنی آخری رپورٹ میں مسٹر لارسن کا کہنا تھا کہ شدت پسند گروپ داعش اور النصرہ فرنٹ لبنان میں فلسطینی پناہ گزین کیمپوں میں اپنا اثرو رسوخ بڑھانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

حز ب اللہ کی بیرون ملک سرگرمیوں کی روک تھام کے لیے سلامتی کونسل کی قرارداد 1559 مجریہ سنہ 2004ء پرعمل درآمد نہ ہونے پر انہوں نے تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ شام کی جنگ میں حزب اللہ کی شمولیت سے لبنان کی قومی سلامتی کو نقصان پہنچا ہے۔

خیال رہے کہ ٹیری روڈ لارسن گذشتہ 12 سال سے لبنان میں اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی کے طورپر خدمات انجام دیتے چلے آ رہےہیں۔ انہوں نے رواں ماہ کے آخر میں عہدے سے سبکدوشی کا اعلان کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں