.

مکہ مکرمہ میں مشرق وسطیٰ کے بڑے سکیورٹی مرکز کا قیام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزرت داخلہ بہت جلد صوبہ مکہ میں مشرق وسطیٰ کے سب سے جدید اور بڑے سکیورٹی کمانڈ سنٹر کا افتتاح کرنے والی ہے۔

اس کمان مرکز میں قائم روڈ سکیورٹی کنٹرول روم پہلے ہی کام کا آغاز کر چکا ہے۔اس کو 911 کے ذریعے رپورٹس موصول ہورہی ہیں۔سعودی عرب کے ولی عہد ،نائب وزیراعظم اور وزیرداخلہ شہزادہ محمد بن نایف نے گذشتہ سال اس کا افتتاح کیا تھا۔

سعودی وزارت داخلہ نے قومی مرکز برائے مشترکہ سکیورٹی آپریشنز کے انتظام وانصرام کے لیے سولہ سو افسروں اور پرائیویٹ اہلکاروں کو تربیت دی ہے۔اس کمان کے نمبر 911 کو بتدریج مختلف سکیورٹی شعبوں کے نمبروں سے تبدیل کردیا جائے گا۔اس مشترکہ نمبر سے معلومات چند سیکنڈز میں ایک شعبے سے دوسرے شعبے تک پہنچائی جاسکتی ہیں۔

وزارت داخلہ موجودہ آپریشنز رومز کو بھی ختم کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔انھیں ایک جگہ منتقل کردیا جائے گا اور وہاں ایک وقت میں چار سو سے زیادہ افسر اور پرائیویٹ اہلکار خدمات انجام دیا کریں گے۔

سکیورٹی کی نگرانی کے لیے یہ جدید ترین مراکز میں سے ایک ہے اور یہاں اٹھارہ ہزار کیمروں کے ذریعے مانیٹرنگ کی جارہی ہے،انھیں مستقبل میں سمارٹ ایپلی کیشنز سے منسلک کردیا جائے گا۔اس مرکز میں کام کرنے والے سیکورٹی اہلکار اور افسر انگریزی زبان روانی سے بولتے ہیں اور انھیں اس سلسلے میں بیرون ملک تربیت دلائی گئی ہے۔

اس مرکز میں دو بڑی بڑی سکرینیں نصب کی گئی ہیں اور انھیں مشرق وسطیٰ میں سب سے بڑی سکریینیں سمجھا جاتا ہے۔اس مرکز نے خصوصی افراد مثلاً قوت گویائی اور سماعت سے محروم افراد کو خدمات کی فراہمی یقینی بنائی ہے۔ان کی جانب سے بھیجی گئی رپورٹس کو بآسانی وصول کیا جاسکتا ہے۔

یہ مرکز اپنے قیام کے بعد سے مختلف مدارج سے گزرا ہے۔قبل ازیں یہ کمانڈ اور کنٹرول سنٹر کے نام سے جانا جاتا تھا اور سکیورٹی حکام کے اقدامات اور کارروائیوں کو مربوط بنانا اس کی ذمے داری تھی۔