.

اسرائیل میں مذہبی شدت پسندوں کے اتحاد پرامریکی تشویش

اسرائیل میں نیا حکومتی اتحاد کئی سوالات جنم دے رہا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی حکومت نے اسرائیل میں شدت پسند مذہبی جماعتوں پر مشتمل قائم ہونے والے نئے حکومتی اتحاد پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ صہیونی ریاست میں بننے والے اتحاد نے کئی طرح کے سوالات پیدا کردیے ہیں۔

امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان مارک ٹونر نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل میں بننے والے نئی مذہبی سیاسی اتحاد سے متعلق ہمیں جو رپورٹس ملی ہیں ان سے کئی جائز سوالات اٹھتے ہیں۔ امریکا اسرائیلی حکومت کے اقدامات پر بھی نظر رکھے گا۔

ترجمان نے کہا کہ ہم ان رپورٹس کا جائزہ لے رہے ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل میں نیا حکومتی اتحاد ملک کی تاریخ کا سخت گیر مذہبی سیاسی اتحاد ہے۔ ہم جانتے ہیں کہ اس اتحاد میں اکثریت ایسے وزراء کی شامل ہے جو مسئلہ فلسطین کے دو ریاستی حل کے خلاف ہیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ اسرائیل میں قائم ہونے والے حکومتی اتحاد پر جائز سوالات پیدا ہو رہے ہیں مگر ہم ساتھ ساتھ اسرائیلی حکومت کی پالیسیوں اور اقدامات پر بھی نظر رکھیں گے۔