.

شام کا نامور فٹبال کوچ رکھنے کا خواب، تنخواہ 12.5 لاکھ ڈالر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شاید آپ میں سے کسی کو یاد ہو کہ یکم اپریل کو "سیریئن عرب فیڈریشن فار فٹبال" کی جانب سے دنیا کے معروف ترین پرتگالی فٹبال کوچ جوزے مرینیو کو بھیجے گئے ایک تحریری خط کا انکشاف ہوا تھا جس میں جوزے کو پیش کش کی گئی تھی کہ وہ شام کی فٹبال ٹیم کو تربیت دیں۔ تاہم شامی فیڈریشن کا یہ خواب شرمندہ تعبیر نہ ہوسکا اور جوزے نے گزشتہ روز معروف انگلش کلب "مانچسٹر یونائیٹڈ" کے ساتھ معاہدے پر دستخط کردیے۔ معاہدے کے نکات سے واضح ہوتا ہے کہ جوزے کی ماہانہ تنخواہ ( 12.5 لاکھ ڈالر) شام کے تمام ارکان پارلیمنٹ اور وزراء کی مجموعی تنخواہ(.55 8 لاکھ ڈالر) سے بھی زیادہ ہے۔

شامی فٹبال فیڈریشن کے اس اقدام کو بعض حلقوں کی جانب سے محض سستی شہرت حاصل کرنے کی کوشش قرار دیا گیا جب کہ بعض نے اس کو یکم اپریل کے "جھوٹ" سے تعبیر کیا۔ جوزے مرینیو ماضی میں کئی معروف ٹیموں کے ساتھ وابستہ رہ چکے ہیں جن میں اطالوی کلب انٹرمیلان اور اسپین کا کلب ریال میڈرڈ شامل ہیں۔

تحمل کے ساتھ "شائستہ" جواب

شامی فیڈریشن کے سکریٹری جنرل قتیبہ الرفاعی کے ہاتھ کا دستخط شدہ خط بذریعہ ای میل مرینیو کے امور کی نگراں کمپنی کو بھیجا گیا۔ تاہم جب فیڈریشن نے اپنے فیس بک پیج پر خط کی تصویر پوسٹ کی اور خط بھیجنے کا اعتراف کیا تو دنیا بھر میں اس کی جگ ہنسائی ہوئی۔ مختلف حلقوں میں یہ سوال اٹھایا گیا کہ ایک ایسی ریاست جس کو خانہ جنگی نے برباد کردیا، جس کے عوام اپنی حکومت کے خلاف خونی انقلاب کے درپے ہیں، بے گھر شہری پناہ طلب کررہے ہیں اور اس کی ٹیم کا شمار بدترین ٹیموں میں ہوتا ہے، وہ ایک ایسے معروف کوچ کے ساتھ کس طرح معاہدہ کرسکتی ہے جو دس لاکھ ڈالر سے کم ماہانہ تنخواہ قبول نہیں کرتا۔ سونے پر سہاگہ یہ کہ اسے دمشق میں قیام پر مجبور ہونا پڑتا جو تباہی اور بربادی کے ساتھ ساتھ خطرات سے بھرا ہوا ہے۔

فیڈریشن نے جوزے کو یہ خط ہسپانوی زبان میں لکھ کر بھیجا تھا اور شاید فیڈریشن کا گمان ہو کہ جوزے کا تعلق اسپین سے ہے۔ دوسری جانب پرتگالی کوچ نے اس مضحکہ خیز پیش کش اور اپنی سطح کی تخفیف پر کسی غیض و غضب کے رد عمل کا اظہار نہیں کیا بلکہ Gestifute نامی ایک پرتگالی کمپنی کے ذریعے فیڈریشن کو جواب ارسال کیا۔ جواب میں کہا گیا کہ "پیش کش موصول ہوگئی ہے اور وہ اس دعوت کے ملنے پر فخر محسوس کررہے ہیں تاہم اس وقت ان کے لیے یہ پیش کش قبول کرنا ممکن نہیں"۔ بین الاقوامی ذرائع ابلاغ نے متفقہ طور پر جوزے کے اس جواب کو شائستہ قرار دیا۔

شامی وزراء اور ارکان پارلیمنٹ کی تنخواہ

سابقہ اعداد و شمار کی بنیاد پر ہم فرض کرسکتے ہیں کہ اس وقت شام میں ہر وزیر کی تنخواہ مع تمام الاؤنسز 3000 ڈالر ہے۔ پارلیمنٹ کے ارکان کی تعداد 250 اور وزراء کی 35 ہے۔ اس طرح ان سب کی مجموعی تنخواہ ماہانہ 8 لاکھ 55 ہزار ڈالر بنتی ہے۔ یہ رقم آئندہ ہفتے "مانچسٹر یونائیٹڈ" میں اپنی ذمہ داری سنبھالنے والے جوزے مرینیو کی تنخواہ سے کافی کم ہے جو ماہانہ 12.5 لاکھ ڈالر وصول کریں گے۔

اکثر بین الاقوامی نیوز ایجنسیوں کا اس بات پر اتفاق ہے کہ 52 سالہ جوزے مرینیو 3 سال کے عرصے تک مانچسٹر یونائیٹڈ کو تربیت دیں گے۔ اس کے عوض وہ سالانہ 1 کروڑ پاؤنڈ یعنی 1.3 کروڑ یورو یا 1.5 کروڑ ڈالر معاوضہ وصول کریں گے۔ اس کے علاوہ ٹیم کے یورپی چیمپیئن بننے کی صورت میں جوزے کو 50 لاکھ پاؤنڈ اور انگلش لیگ کا تاج سر پر سجانے کے نتیجے میں 25 لاکھ پاؤنڈ اضافی طور پر ملیں گے۔ جوزے کو رہائش کے لیے ایک پُر آسائش بنگلہ بھی فراہم کیا گیا ہے جہاں وہ اپنی اہلیہ، 14 سالہ بیٹے اور 21 سالہ بیٹی کے ساتھ قیام کریں گے۔