.

سعودی عرب :بھارتی اور پاکستانیوں سمیت 823 مشتبہ غیرملکی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں حکام نے 29 پاکستانی، 19 بھارتی اور آٹھ امریکی شہریوں سمیت 823 غیرملکیوں کو دہشت گردی کی سرگرمیوں میں ملوّث ہونے کے شبے میں گرفتار کر لیا ہے۔

ان زیر حراست مشتبہ غیر ملکیوں میں تین یورپی ،دوانڈونیشی ،چھے فلپائنی اور 18 افریقی بھی شامل ہیں۔ افریقیوں میں زیادہ تر ایتھوپیا ،اریٹریا اور نائیجیریا سے تعلق رکھتے ہیں۔

سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان میجر جنرل منصور الترکی نے الریاض سے واشنگٹن میں کانفرنس کال کے ذریعے صحافیوں کو بتایا ہے کہ ان گرفتار غیرملکیوں میں سے چند ایک کے خلاف ہی ابھی تک فرد جرم عاید کی گئی ہے اور بیشتر سے ابھی تحقیقات کی جارہی ہے۔

انھوں نے بتایا ہے کہ ''سعودی حکومت نے 117 بنک کھاتے منجمد کر دیے ہیں۔ان کے ذریعے دہشت گرد تنظیموں کو رقوم منتقل کی جارہی تھیں۔ اس کے علاوہ خیراتی اداروں کے عطیات کو دہشت گردی کے مقاصد کے لیے استعمال کو روکنے کے لیے بھی اقدامات کیے جارہے ہیں''۔

ان کا کہنا تھا کہ سعودی حکومت نے 240 مشتبہ افراد کے خلاف دہشت گردی کے لیے رقوم دینے کے شُبے میں مقدمے چلائے ہیں۔ہم بنکوں کے ذریعے منتقل کی جانے والی تمام رقوم کی نگرانی کررہے ہیں اور منجمد کیے گئے کھاتوں کی بھی تحقیقات کی جارہی ہے''۔

میجر جنرل منصور الترکی نے مزید بتایا کہ گذشتہ دوسال کے دوران ہمیں القاعدہ کے دہشت گردی کے 63 حملوں اور داعش کے 26 حملوں کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ان حملوں میں دو سو سے زیادہ شہری اور پولیس اہلکار مارے گئے ہیں جبکہ 2015ء کے بعد سے 2800 سے زیادہ مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔