.

امریکا: نائیٹ کلب پر حملے کے ملزم کا داعش سے تعلق!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ذرائع ابلاغ نے انکشاف کیا ہے کہ ریاست فلوریڈا کے اورلینڈو شہر میں اتوار کی صبح ہم جنس پرستوں کے ایک نائیٹ کلب میں فائرنگ کر کے 50 سے زاید افراد کو ہلاک کرنے میں ملوث ملزم نے حملے سے قبل امریکی ایمرجنسی سروس نمبر پر فون کر کے شدت پسند تنظیم "داعش" میں شامل ہونے اور داعش کی بیعت کا اعلان کیا تھا۔

’این بی سی‘ ٹیلی ویژن نیٹ نے پولیس ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ اورلینڈو نائیٹ کلب میں قتل عام کے ملزم کی جانب سے کارروائی سے قبل ایمرجنسی فون نمبر 911 پر کال کر کے کہا تھا کہ اس نے داعش کے ہاتھ پر بیعت کرلی ہے۔

امریکی ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹک پارٹی کی انٹیلی جنس کمیٹی کےرکن آدم شیف نے بتایا کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو یہ شبہ ہے کہ فلوریڈا میں ہم جنس پرستوں کے کلب پر فائرنگ میں ملوث ملزم کا داعش کے ساتھ کوئی تعلق رہا ہے۔

آدم شیف کا کہنا تھا کہ "رمضان المبارک میں ایسا واقعہ پیش آنا شام کے شہر الرقہ میں داعش کے گڑھ میں کی جانے والی کارروائی کا آپس میں کوئی تعلق ضرور ہے۔ اگر یہ درست ہے کہ ملزم نے داعش کا نام لیا ہے تو اس کارروائی کی منصوبہ بندی بھی داعش ہی کی جانب سے کی گئی ہوگی۔ کیونکہ اس نوعیت کی دہشت گردی نظریاتی طور پر مضبوط دہشت گردوں ہی کی جانب سے کی جاسکتی ہے۔"