.

نائیٹ کلب میں فائرنگ امریکی تاریخ کا بدترین واقعہ ہے: اوباما

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر براک اوباما نے فلوریڈا ریاست کے اورلینڈو میں اتوار کے روز ایک نائیٹ کلب میں ہونے والے قتل عام پر دکھ اور افسوس کا اٖظہار کرتے ہوئے اسے درجنوں معصوم لوگوں کا خوفناک قتل عام قرار دیا ہے۔

اپنے ایک مذمتی بیان میں صدر اوباما کا کہنا تھا کہ نسل یا مذہب کی بنیاد پر کسی ایک شخص کا قتل تمام امریکیوں کے قتل کے مترادف ہے۔ اورلینڈو میں قتل عام دہشت گردی اور نفرت کی بدترین شکل ہے اور اس سے ہمارے نظریات تبدیل نہیں کیے جاسکتے۔

وائیٹ ہاؤس کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ واقعے کے فوری بعد صدر اوباما کے سیکیورٹی مشیروں اور انسداد دہشت گردی حکام کی جانب سے صدر اوباما کو اس کی تفصیلات مہیا کی گئی تھیں۔ صدر اوباما نے واقعے سے متعلق تمام تر تفصیلات فراہم کرنےکی بھی ہدایت کی تھی اور وفاقی حکومت کی جانب سے مقامی حکومت کے ساتھ ہرممکن تعاون کا یقین دلایا تھا۔

خیال رہے کہ اتوار کو علی الصباح ریاست فلوریڈا میں ایک نائیٹ کلب میں فائرنگ کے واقعے میں 50 سے زاید افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے تھے۔ پولیس نے حملہ آور کی شناخت 29 سالہ افغان نژاد عمر متین کے نام سے کی ہے جبکہ ’این بی سی‘ ٹی وی کے مطابق متین کے والد میرصدیق نے بیٹے کی کارروائی سے لاتعلقی کا اعلان کیا ہے۔