.

بدعنوانی کا اسکینڈل ، ٹوکیو کے گورنر رخصت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جاپان میں ٹوکیو کے گورنر، اپنے خلاف سرکاری فنڈ کو ذاتی مصارف میں خرچ کرنے کے الزامات کے پس منظر میں عہدے سے مستعفی ہو گئے ہیں۔ رپورٹوں کے مطابق بدھ کے روز مستعفی ہونے والے گورنر کو مقامی پارلیمنٹ میں عدم اعتماد کی تحریک کا سامنا ہے۔

سرکاری ٹیلی وژن اور دیگر ذرائع ابلاغ کے مطابق 67 سالہ یوچی موسوزئیو نے آج عدم اعتماد کی رائے شماری کے لیے ہونے والے جلسے سے قبل، ٹوکیو کے پارلیمنٹ کے اسپیکر کو اپنے مستعفی ہونے کے ارادے سے آگاہ کیا۔

ٹوکیو کے گورنر کے مستعفی ہونے کی خبر ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب کہ جاپانی دارالحکومت 2020 اولمپکس کی میزبانی کی تیاری کر رہا ہے۔ مبصرین کے مطابق یوچی موسوزئیو کے رخصت ہونے سے شہر میں مذکورہ ایونٹ کے انعقاد کی قدرت پر کوئی اثر ہر گز نہیں پڑے گا۔

موسوزئیو کو سرکاری بیرونی دوروں اور انٹرنیٹ کے ذریعے ہوٹلوں اور پرتعیش سیاحتی مقامات کی بکنگ پر بھاری رقوم خرچ کرنے اور ان میں بعض ادائگیوں میں سرکاری فنڈ استعمال کرنے کے حوالے سے میڈیا کی طرف سے تنقید اور قانونی طور پر پوچھ گچھ کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

موسوزئیو نے قانون کی کسی بھی خلاف ورزی کرنے کی تردید کی تاہم انہوں نے اخلاقی بھول چوک کا اعتراف کرتے ہوئے، اس طوفان کے مقابلے میں غیر سنجیدہ کوشش کرتے ہوئے کئی بار معذرت پیش کی۔