.

شمالی کوریا کے پاس کتنے نیوکلیئر بم ہیں ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

واشنگٹن میں ایک امریکی تھنک ٹینک کے مطابق شمالی کوریا نے گزشتہ 18 ماہ کے دوران ممکنہ طور پر کم از کم 6 نیوکلیئر بم تیار کیے ہیں جس کے نتیجے میں اس کے پاس موجود نیوکلیئر بموں کی مجموعی تعداد 21 تک پہنچ چکی ہوگی۔

دی انسٹی ٹیوٹ آف سائنس اینڈ انٹرنیشنل سیکورٹی نے اپنی رپورٹ میں لگائے گئے اندازے کے لیے فوجی پلوٹونیئم اور اعلی افزودہ یورینیئم کی اس مقدار کو بنیاد بنایا ہے جو شمالی کوریا نے ممکنہ طور پر پیونگ یانگ کے شمال میں یونگ بیون کے نیوکلیئر کمپلیکس میں تیار کی ہے۔

مصنوعی سیارے سے لی گئی تصاویر کے تجزیے کا سہارا لیتے ہوئے ایٹیمی توانائی کی بین الاقوامی ایجنسی کے سکریٹری جنرل یوکیا امانو نے گزشتہ ہفتے یہ اعلان کیا تھا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ بیونگ یانگ نے یونگ بیون کے پلانٹ کو پھر سے فعال بنا دیا ہے جو نیوکلیئر ہتھیاروں کی تیاری کے لیے پلوٹونیئم کی عمل گاہ کے طور پر استعمال ہوتا ہے۔

2014 کے اختتام پر انسٹی ٹیوٹ نے شمالی کوریا کے نیوکلیئر بموں کی تعداد کا اندازہ 10 سے 16 کے درمیان لگایا تھا۔

اس وقت سے اب تک شمالی کوریا نے 4 سے 6 مزید بم تیار کیے ہیں جس سے اس کے مجموعی بموں کی تعداد 13 سے 21 کے درمیان ہو گئی ہے۔ اس تمام اعداد و شمار میں پیونگ یانگ کی جانب سے 6 جنوری کو کیے جانے والے اس تجربے کو پیش نظر رکھا گیا ہے جہاں اس نے ایک عام ایٹمی بم سے کہیں زیادہ برتر ہائیڈروجن بم کا دھماکا کرنے کا اعلان کیا تھا۔

ان تخمینوں میں اُس مقدار کو شامل نہیں کیا گیا ہے جو پیونگ یانگ کی جانب سے فوجی یورینیئم تیار کرنے والی ایک دوسری ممکنہ فیکٹری سے حاصل ہوسکتی ہے۔