فرانس میں ہزاروں افراد کا ایرانی رجیم کے خاتمے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایرانی اپوزیشن کی نمائندہ جماعتوں اور سیاسی رہ نماؤں سمیت ہزاروں افراد نے ملک میں قائم ولایت فقیہ کے نظام کے خاتمے کا پرزور مطالبہ کرتے ہوئے خمینی رجیم کے خلاف جدوجہد تیز کرنے کا عزم ظاہر کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گذشتہ روز پیرس میں ایرانی اپوزیشن کی جانب سے ایک عظیم الشان کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں دنیا بھر میں موجود ایرانی اپوزیشن کے رہ نماؤں ، سیاسی کارکنوں اور ایرانی تارکین وطن نے شرکت کی۔

کانفرنس میں امریکا، یورپ اور عرب ممالک کی اہم شخصیات کو بھی مدعو کیا گیا تھا۔ پیرس میں منعقدہ کانفرنس میں پانچ براعظموں میں پھیلے لاکھوں ایرانیوں نے شرکت کر کے ایرانی رجیم کے خلاف اپنی جدوجہد تیز کرنے کا اعلان کیا۔

دو روزہ کانفرنس کے دوسرے روز بھی دنیا کے مختلف ملکوں سے نمائندہ ایرانی شخصیات اس میں شرکت کی۔ گذشتہ روز کانفرنس کے دوران خطاب کرتے ہوئے مقررین نے ایران میں شہری آزادیوں پر ریاست کی جانب سے قدغنیں لگانے کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔ ایرانی حکومت کی جانب سے سیاسی بنیادوں پر کارکنوں کو پھانسیاں دینے کے تمام سابقہ ریکارڈ توڑے جانے پر ملک گیر احتجاجی مظاہروں کا بھی اعلان کیا ہے۔ اس کے علاوہ اس کانفرنس میں ایرانی اپوزیشن مستقبل کے سیاسی لائحہ عمل پر بھی غور کریں گے۔

جمعہ کے روز منعقدہ کانفرنس کے سیشن کے لیے ’’مشرق وسطیٰ کا بحران اور اس کا حل؟‘‘ کا عنوان رکھا گیا تھا جس میں مغربی ملکوں اور عرب ممالک کے سفارت کاروں اور سیاسی رہ نماؤں نے شرکت کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں