.

افسران پاسداران انقلاب کا بھاری تنخواہیں لینے کا انکشاف!

بنک افسران کی بوگس تنخواہوں کے اسکینڈل کا رد عمل؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں اعلیٰ حکومتی عہدیداروں کے غیرمعمولی معاوضوں اور مراعات کے حوالے سے قدامت پسندوں کی جانب سے حال ہی میں جاری کردہ ایک فہرست نے صدر حسن روحانی کو مشکل میں ڈال دیا تھا، مگر اس کے جواب میں سوشل میڈیا پر ایک نئی فہرست بھی سامنے آئی ہے جس میں پاسداران انقلاب کے سینیر عہدیداروں کے بھاری بھرکم معاوضوں کے چونکا دینے کے والے اعدادو شمار بیان کیے گئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حال ہی میں ایرانی ذرائع ابلاغ نے خبر دی تھی کہ تین بنک سربراہان کو بھاری تنخواہیں وصول کرنے اور بوگس مشاہرے جاری کرنے کے جرم میں ملازمتوں سے فارغ کیا گیا تھا۔ بنک سربراہان کی ملازمتوں سے سبکدوشی کو اصلاح پسندوں اور بنیاد پرستوں کے درمیان جاری سیاسی رسا کشی کا شاخسانہ بھی قرار دیا جا رہا ہے مگر دوسری جانب پاسداران انقلاب کے افسران کی غیرمعمولی مراعات اور فلک بوس مشاہروں نے ایرانی رجیم کو ایک نئی مشکل میں ڈال دیا ہے۔

ایران میں سوشل میڈیا پر تیزی کے ساتھ مقبول ہونے والی پاسداران انقلاب کے بھاری تنخواہیں وصول کرنے والوں کی فہرست میں محکمہ تعلقات عامہ کے ایک عہدیدار رمضان شریف کو تسلیم کرنا پڑا ہے کہ پاسداران انقلاب کے سینیر عہدیدار بھاری معاوضے وصول کرتے ہیں۔ خود رمضان شریف کا ماہنانہ معاوضہ 4 کروڑ 47 لاکھ ایرانی تومان ہے جو امریکی کرنسی میں ایک لاکھ 36 ہزار ڈالر کے مساوی ہے۔

پاسداران انقلاب کی تنخواہوں سے متعلق فہرست پہلی بار 11 جون کو منظرعام پرآئی تھی۔ اغلب امکان یہ ہے کہ یہ فہرست اصلاح پسندوں کی جانب سے لیک کی گئی ہے۔

مبصرین کا خیال ہے کہ پاسدران انقلاب کی تنخواہوں سے متعلق فہرست صدر حسن روحانی کے مقربین کی جانب سے جاری کی گئی ہے جنہوں نے شدت پسندوں کی طرف سے بنک افسران کی بھوگس تنخواہوں کے معاملے پر مخالفین سے انتقام لینا چاہتے ہیں۔

ایران میں پاسدران انقلاب کے سینیر افسران کی بھاری بھرکم تنخواہوں کی فہرست ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب ملک میں غریب طبقہ بدترین معاشی استحصال کا سامنا کر رہا ہے۔ ایران میں نچلی سطح کے ایک عام ملازم کی تنخواہ امریکی کرنسی میں 200 سے 500 ڈالر کے درمیان ہے جب کہ پاسداران انقلاب کے افسران کروڑوں ڈالر تنخواہیں لے رہے ہیں۔

پاسداران انقلاب کے تعلقات عامہ کے عہدیدار رمضان شریف کا کہنا ہے کہ سینیر افسران کی تنخواہوں کے بارے میں مذکورہ تفصیلات جاری کرنے کا مقصد سیاسی فضاء کو مزید مکدر کرنا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ اگر سیکیورٹی کے مسائل رکاوٹ نہ بنیں تو وہ بھی بڑے بڑوں کی تنخواہوں اور دیگر مراعات کی تفصیلات جاری کرسکتے ہیں۔

مذکورہ فہرست کے مطابق پاسداران انقلاب کے چیف جنر محمد علی جعفری کی ماہانہ تنخواہ 1 لاکھ 81 ہزار ڈالر، القدس ملیشیا کے سربراہ جنرل قسم سلیمانی کی 1 لاکھ 70 ہزار، پاسداران کے ڈپٹی چیف جنرل حسین سلامی کی 1 لاکھ 68 ہزار، میزائل یونٹ کے سربراہ علی جاجی زادہ کی 96 ہزار،پاسیج فورس کے سربراہ محمد رضا نقدی کی ایک لاکھ 58 ہزار، پاسداران انقلاب کے شعبہ تعلقات عامہ کے سربراہ رمضان شریف کی ایک لاکھ 36 ہزار، بری فوج کے سربراہ جنرل باکپور کی ایک لاکھ 55 ہزار،خاتم الانبیا بریگیڈ کے کمانڈر غلام علی رشید کی 1 لاکھ 66 ہزار اور نیول چیف علی فدوی کی ایک لاکھ 41 ہزار ڈالر تنخواہ بتائی جاتی ہے۔