.

فرانس میں دہشت گردانہ حملے کی عالمی سطح پر شدید مذمت

مشکل کی گھڑی میں پیرس کے ساتھ ہیں:سعودی عرب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کے شہر نیس میں گذشتہ روز ایک ٹرک کے ذریعے دسیوں افراد کو کچل کرہلاک کیے جانے کے ہولناک واقعے پرعالمی سطح پر شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔ عالمی برادری کی جانب سے نیس حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کے ساتھ فرانسیسی حکومت کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ کل جمعرات کی شام فرانس کے جنوب مشرقی شہر نیس میں قومی دن کی مناسبت سے منعقدہ ایک تقریب پر چڑھ دوڑا تھا جس کے نتیجے میں کم سے کم 84 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔ فرانس میں پیش آنے والے اس خونی واقعے پر عالمی برادری کی جانب سے شدید مذمت کی جا رہی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی’واس‘ کے مطابق سعودی حکومت نے فرانس میں ٹرک کے ذریعے درجنوں افراد کو کچلے جانے کے واقعے کو دہشت گردی قرار دیتے ہوئے فرانس کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق سعودی حکومت کی طرف سے پیرس کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ مشکل کی اس گھڑی میں ریاض حکومت فرانس کے ساتھ ہے۔ سعودی عرب کا کہنا ہے کہ ٹرک کے ذریعے بے گناہ افراد کو کچل کرہلاک اور زخمی کرنے کا خونی واقعہ بدترین دہشت گردی ہے مگر اس طرح کے سفاکانہ واقعات سے فرانس کی دہشت گردی کے خلاف جنگ کے عزم کو کمزور نہیں کیا جاسکتا ہے۔

مصری کی سب سے بڑی دینی درسگاہ جامعہ الازھر کی جانب سے نیس واقعے پر اپنے رد عمل میں کہا ہے کہ نہتے شہریوں کو کچل کرہلاک کرنا بدترین بزدلی اور سفاکانہ کارروائی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ بے گناہ شہریوں کو اس بے دردی کے ساتھ ہلاک کرنا کسی مذہب اور قانون کے تحت جائز نہیں ہے۔ جامعہ الازھر نے دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں عالمی برادری کی صفوں میں مزید اتحاد کے قیام کی ضرورت پر زور دیا۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے فرانس میں معصوم شہریوں کے قتل عام کو دہشت گردی کی خونی واردات قرار دیتے ہوئے اس کی شدید مذمت کی۔ سلامتی کونسل کی جانب سے بھی نیس حملے کی پرزور الفاظ میں مذمت کی گئی۔

امریکی وزیرخاجہ جان کیری، روسی وزیراعظم دیمتری مدویدوف، جرمن چانسلر انگیلا مرکل، وٹیکن کے ترجمان پاپ فیڈریکولومبارڈی، عرب لیگ ، یورپی یونین کے چیئرمین ڈونلڈ ٹوسک، خلیج تعاون کونسل کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر الطیف الزبیانی، یورپی یونین کے ہائی کمیشن، ترک وزیراعظم علی یلدرم،کینیڈا اور پولینڈ کے وزراء اعظم، مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی اور متحدہ عرب امارات کے وزیرخارجہ سمیت دنیا بھر کی جانب سے فرانس میں تازہ دہشت گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے۔