.

ترکی: حکومت کا تختہ الٹنے کی سازش ناکام،104 باغی فوجی ہلاک

حکومت کے خلاف بغاوت میں فضائیہ ،نیم فوجی دستوں اور بعض مسلح عناصر نے کردار ادا کیا: آرمی چیف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی میں صدر رجب طیب ایردوآن کی منتخب حکومت کا تختہ الٹنے کی سازش ناکام بنا دی گئی ہے۔اس بغاوت کو فرو کرنے کی کارروائی میں 104 باغی فوجی ہلاک ہوگئے ہیں۔

ترکی کے قائم مقام چیف آف آرمی اسٹاف اُومیت دوندار نے استنبول میں ہفتے کے روز ایک نشری نیوزکانفرنس میں کہا ہے کہ ''فوجی بغاوت کو ناکام بنا دیا گیا ہے۔باغیوں کے خلاف کارروائی میں 41 پولیس اہلکاروں اور 47 شہریوں سمیت 90 افراد شہید ہوئے ہیں''۔

انھوں نے بتایا ہے کہ حکومت کا تختہ الٹنے کی اس سازش میں فضائیہ ،نیم فوجی دستوں (جینڈرمیری) اور بعض مسلح عناصر نے کردار ادا کیا ہے اور بہت سے کمانڈروں کو نامعلوم مقامات پر منتقل کردیا گیا ہے۔۔

قائم مقام آرمی چیف نے مزید کہا کہ ترکی کی مسلح افواج نے اپنی صفوں سے ''متوازی ڈھانچے'' کے ارکان کو پاک کرنے کا عزم کررکھا ہے۔

متوازی ڈھانچے کی مختصراصطلاح صدر رجب طیب ایردوآن اور دوسرے حکومتی عہدے دار امریکا میں مقیم ترک دانشور فتح اللہ گولن کے پیروکاروں کے لیے استعمال کرتے ہیں۔

درایں اثناء صدر رجب طیب ایردوآن نے ٹویٹر کے ذریعے ترک عوام کے نام پیغام میں کہا ہے کہ ''وہ آج رات سڑکوں پر ہی رہیں۔اس سے کچھ فرق نہیں پڑتا کہ بغاوت کی کوشش کس سطح پر ہے مگر کسی بھی لمحے ایک نئی لہر اٹھ سکتی ہے''۔