.

صدر اور وزیراعظم بدستور اقتدار پر فائز ہیں:ترک ایوان صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی میں فوجی بغاوت کی خبروں کےجلو میں ترکی کے ایوان صدر اور وزیراعظم ہاؤس کی جانب سے جاری کردہ بیانات میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ حالات ابھی تک حکومت کے قابو میں ہیں۔ صدر اور وزیراعظم بدستور برسراقتدار ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ترک وزیراعظم نے مائیکرو بلاکنگ ویب سائیٹ’ٹوئٹر‘ پر پوسٹ ایک بیان میں کہا ہے کہ جمہوریت پر شب خون مارنے کی کوشش کی گئی ہے۔ حکومت جمہوریت کے دفاع کے لیے ہرضروری قدم اٹھائے گی چاہے اس میں کچھ لوگوں کی ہلاکتیں بھی ہوتی ہیں۔ انہوں نے شہریوں سے پرامن رہنے پرزور دیا۔

وزیراعظم کا کہنا ہے کہ حکومت کسی کوجمہوریت پر شب خون مارنے کی اجازت نہیں دے گی۔ انہوں نے تسلیم کیا کہ بعض سرکاری تنصیبات کا ابھی تک فوج کےایک گروپ کی جانب سے محاصرہ بدستور قائم ہے۔

ادھر ترکی کے ایوان صدر کے ایک ذریعے کا کہنا ہے کہ منتخب صدر اور وزیراعظم ابھی تک برسراقتدار ہیں۔

ایوان صدر کے ذریعے کا کہنا ہے کہ صدر ایردوآن محفوظ مقام پرہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ فوج کے ایک گروپ کی جانب سے اقتدار پرقبضے کا اعلان عسکری قیادت کے مشورے کے بغیر کیا گیا ہے۔