سعودی عرب کا ترکی میں حالات معمول پر آنے کا خیرمقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی میں جمعہ کے روز فوج کے ایک گروپ کی جانب سے منتخب حکومت کا تختہ الٹ کر ملک میں مارشل لاء نافذ کرنے کی کوشش ناکام بنائے جانے اور جلد از جلد حالات کو معمول پر لانے پر سعودی عرب نے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی وزارت خارجہ کےایک عہدیدار نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ برادر مسلمان ملک ترکی میں گڑ بڑ کے بعد حالات کا معمول پر آنا خوش آئند ہے۔ ہم ترکی کے امن واستحکام کے حامی ہیں اور کسی صورت میں نہیں چاہتے کہ ترکی میں انارکی اور بدامنی پھیلے۔

سعودی پریس ایجنسی’واس‘ نے ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ ریاض حکومت کی طرف سے انقرہ میں حالات معمول پر آنے اور ریاستی امور کے صدر رجب طیب ایردوآن کے ہاتھ میں برقرار رہنے کا خیر مقدم کیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی حکومت کی طرف سے واضح کیا گیا ہے کہ وہ موجودہ حالات میں ترکی میں منتخب حکومت، آئینی دستوری نظام اور ترک عوام کے اجتماعی فیصلے کا احترام کرتا ہے۔

خیال رہے کہ جمعہ اور ہفتہ کی درمیانی شب ترک فوج کے ایک گروپ نے حکومت کے خلاف علم بغاوت بلند کرنے کی کوشش کی تھی مگر ترک عوام نے سڑکوں پر نکل پر فوجی بغاوت کی سازش ناکام بنا دی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں