سعودی فورسز نے حوثیوں کا چلایا بیلسٹک میزائل مار گرایا

یمن کے صوبہ ابین میں عرب اتحاد کے فضائی حملے میں القاعدہ کے متعدد جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے فضائی دفاعی نظام نے یمن کی جانب سے فائر کیا گیا ایک بیلسٹک میزائل سرحدی علاقے میں تباہ کردیا ہے۔

سکیورٹی ذرائع نے ہفتے کے روز العربیہ نیوز چینل کو بتایا ہے کہ میزائل حوثی باغیوں نے چلایا تھا اور اس کو سرحدی صوبے نجران کی فضائی حدود میں ناکارہ بنا دیا گیا ہے۔

درایں اثناء نامعلوم ذرائع نے ایک اور سرحدی صوبے جازان میں سعودی شہری دفاع کو بتایا ہے کہ یمنی علاقے کی جانب سے فائر کیے گئے میزائل ایک شہری کے مکان پر گرے ہیں جس سے ایک بچہ زخمی ہوگیا ہے۔

ادھر یمن کے جنوبی علاقے میں سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے القاعدہ کے ٹھکانوں پر حملے کیے ہیں جس کے نتیجے میں متعدد جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔

عسکری ذرائع نے بتایا ہے کہ صوبے ابین کے قصبے جعار کے نواح میں القاعدہ کے جنگجوؤں کے ایک اجتماع پر دو فضائی حملے کیے گئے ہیں۔ان میں متعدد جنگجو ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔

یہ حملے عدن میں عسکری حکام کے متعدد اجلاسوں کے بعد کیے گئے ہیں۔ان اجلاسوں میں ابین میں القاعدہ کے جنگجوؤں کے خلاف منظم انداز میں کارروائیوں پر غور کیا گیا ہے۔

صدر عبد ربہ منصورہادی کی وفادار فورسز نے مارچ میں عرب اتحاد کی مدد سے جنوبی صوبوں میں القاعدہ کے خلاف ایک بڑی کارروائی کا آغاز کیا تھا اور انھوں نے متعدد شہروں پر دوبارہ قبضہ کر لیا ہے لیکن انھیں ابین کے دارالحکومت زنجبار سے القاعدہ کے جنگجوؤں کے حملے کے بعد پسپا ہونا پڑا ہے۔

عینی شاہدین کے مطابق القاعدہ کے جنگجوؤں نے اپنے خلاف ایک نئی بڑی کارروائی کے پیش نظر ابین کو عدن سے ملانے والی شاہراہ پر بارودی سرنگیں بچھا دی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں