ایران میں 2017ء میں ہونے والے صدارتی انتخاب کی تاریخ کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران کی شورائے نگہبان نے آیندہ سال ہونے والے صدارتی انتخابات کی تاریخ کا اعلان کردیا ہے اور صدارتی انتخاب کے لیے پولنگ 19 مئی 2017ء کو ہوگی۔توقع ہے کہ موجودہ صدر حسن روحانی ان میں دوبارہ امیدوار ہوں گے۔

اعتدال پسند حسن روحانی نے اپنے دور صدارت میں گذشتہ سال مغربی طاقتوں کے ساتھ ایران کے جوہری پروگرام پر تنازعے کے حل کے لیے معاہدہ طے کیا تھا جس کے تحت ایران پر عاید بین الاقوامی پابندیاں ختم کردی گئی ہیں اور اس نے اپنے جوہری پروگرام کو محدود کردیا ہے۔ایرانی صدر کو اس معاہدے کے بعد سے مغرب کے ساتھ راہ و رسم بڑھانے کے معاملے پر دباؤ کا سامنا ہے۔

سخت گیروں کا مؤقف ہے کہ اس معاہدے کے نتیجے میں مشکلات کا شکار ایرانیوں کو بہت کم معاشی ثمرات حاصل ہوئے ہیں۔ایرانی صدر کو سرکاری کمپنیوں کے ملازمین کو بہت زیادہ تن خواہیں دینے کا ایک اسکینڈل منظرعام پر آنے کی وجہ سے بھی تنقید کا سامنا ہے۔ان ملازمین کی تنخواہوں کی سلپیں میڈیا کے ذریعے منظرعام پر آئی ہیں جن سے انھیں بھاری مشاہرے دینے کا انکشاف ہوا ہے۔

اگرچہ حسن روحانی دنیا کو دکھانے کے لیے ایران کے منتخب صدر ہیں لیکن اصل اقتدار واختیارات سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای اور پاسداران انقلاب کے پاس ہے۔اگر حسن روحانی آیندہ سال ہونے والے صدارتی انتخاب میں ہار جاتے ہیں تو یہ پہلا موقع ہوگا کہ 1979ء کے انقلاب کے بعد ایران میں کوئی برسراقتدار صدر دوبارہ منتخب نہیں ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں