.

جاپان: عرب دوست خاتون سیاستدان ٹوکیو کی گورنر مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جاپان کی سابق خاتون وزیردفاع اور عرب ممالک کے ساتھ دوستانہ مراسم کی حامی ایک سرکردہ سیاسی رہ نماء کو دارالحکومت ٹوکیو کا گورنر مقرر کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے جاپانی ریڈیو اور ٹیلی ویژن کارپوریشن کے حوالے سے بتایا ہے کہ رکن پارلیمنٹ اور سابق وزیردفاع کوئیکی یوریکو جاپانی تاریخ میں پہلی خاتون ہیں جو گورنر کے منصب پر فائز ہوئی ہیں۔ مسز یوریکو جاپان کی سابق وزیر دفاع ہونے کے ساتھ ساتھ عرب ممالک کے ساتھ دوستانہ تعلقات کے قیام کی کھل کر وکالت کرتی رہی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ عرب حلقوں میں انہیں جاپان میں ’عرب دوست‘ کے طورپر جانا جاتا ہے۔

ٹوکیو کی گورنر شپ کے عہدےکے لیے کوئیکی اور شمالی علاقے ایواتیہ کے سابق گورنر ہیرویا ماسودا کے درمیان مقابلہ تھا۔ ماسوڈا کو موجودہ حکمراں اتحاد اور دائیں بازو کے وزیراعظم شینزو آبیئے کی پالیسیوں کے ناقد صھافی شونٹارو توریگویہ کی حمایت بھی حاصل تھی۔

خیال رہے کہ جاپان میں بعض علاقوں کے گورنروں کی تبدیلی کا تازہ سیاست دانوں کے مالی اسکینڈلز ہیں۔ ان اسکینڈلز کی زد میں بعض گورنر بھی آئے میں ٹوکیو کے سبکدوش گورنر یوئیچی ماسوزویہ بھی شامل ہیں۔ انہوں نے گذشتہ مہینے ذاتی سفر کےدوران سرکاری رقوم خرچ کرنے کےالزامات سامنے آنے کے بعد گورنر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ قبل ازیں ایک دوسرے گورنر ناوکی اینوسیہ بھی بدعنوانی کے الزامات کے بعد عہدہ چھوڑ دیا تھا۔