.

یمن سے سعودی قصبے پر گولہ باری ،چار افراد جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے ایک سرحدی قصبے میں یمن سے چلایا گیا ایک گولہ گرا ہے جس سے چار افراد جاں بحق اور تین زخمی ہوگئے ہیں۔

سعودی عرب کے محکمہ شہری دفاع نے سوموار کے روز ایک ٹویٹ میں بتایا ہے کہ جنوب مغربی صوبے جازان میں واقع قصبے سمطح میں گولہ گرا ہے۔محکمے نے یہ نہیں بتایا ہے کہ یہ گولہ کس نے فائر کیا ہے لیکن سعودی عرب کے ساتھ واقع یمن کے شمالی علاقے میں حوثی شیعہ باغی موجود ہیں اور وہی آئے دن سعودی علاقے کی جانب گولہ باری کرتے رہتے ہیں۔

اتوار کے روز سعودی عرب اور یمن کے درمیان سرحد پر شدید جھڑپوں میں سات سعودی فوجی شہید جبکہ دسیوں حوثی جنگجو ہلاک ہوگئے تھے۔حوثی باغیوں نے مبینہ طور پر سعودی علاقے میں دراندازی کی کوشش کی تھی۔

سرحدی علاقے میں یہ گولہ باری سعودی فوج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل احمد العسیری کے ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کو انتباہ کے بعد کی گئی ہے۔انھوں نے حوثیوں کو خبردار کیا تھا کہ سعودی مملکت کی سرحدیں سرخ لکیر ہیں۔