یورپی یونین ترکی کی شمولیت سے متعلق بات چیت روک دے : آسٹریا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

آسٹریا کے چانسلر کرسچیئن کرن نے بدھ کے روز یورپی یونین پر زور دیا ہے کہ وہ ترکی کو یونین میں شامل کرنے سے متعلق بات چیت روک دے۔ یہ مطالبہ ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب کہ انقرہ حکومت جولائی کے وسط میں فوجی انقلاب کی ناکام کوشش کے بعد تطہیر کی ملک گیر مہم میں مصروف ہے۔

کرسچیئن کرن نے آسٹریا کے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ "ہمیں حقیقت کا سامنا کرنا پڑے گا ! انضمام کے حوالے سے مذاکرات اب ایک خیال بن چکے ہیں"۔ انہوں نے مزید کہا کہ " ترکی میں جمہوریت کے معیارات اس سے بہت دور ہیں کہ وہ انقرہ کے یورپی یونین میں شمولیت کے لیے کافی ہوں"۔

آسٹریا کے چانسلر کے مطابق وہ چاہتے ہیں کہ یہ معاملہ 16 ستمبر کو یورپی کونسل کے اجلاس کے دوران زیر بحث لایا جائے۔ تاہم ساتھ ہی انہوں نے یورپی یونین پر زور دیا کہ ترکی کی معیشت کی مدد کے لیے "نئے متبادل حل" تلاش کیے جائیں۔

کرسچیئن کرن نے مہاجرین کے بحران میں انقرہ کے بنیادی کردار پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ترکی " سکیورٹی اور یکجا مسائل میں اہم شریک رہے گا"۔

مقبول خبریں اہم خبریں