صدر براک اوباما داعش کے بانی ہیں: ڈونلڈ ٹرمپ کا نیا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکا کی ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے صدر براک اوباما پر عراق اور شام میں برسر پیکار سخت گیر جنگجو گروپ داعش کا بانی ہونے کا الزام عاید کیا ہے۔انھوں نے اپنی ایک اور گفتگو میں امریکی صدر کو ان کے پورے قانونی نام براک حسین اوباما سے پکارا ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے ریاست فلوریڈا کے شہر فورٹ لوڈر ڈیل میں اپنی انتخابی مہم کے سلسلے میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا ''بہت سے کام صدر اوباما نے کیے ہیں۔وہ داعش کے بانی بھی ہیں''۔انھوں نے اپنی بات میں وزن پیدا کرنے کے لیے تین مرتبہ یہ الزام دُہرایا۔

ڈونلڈ ٹرمپ ماضی میں اپنی حریف ڈیمو کریٹک پارٹی کی صدارتی امیدوار ہلیری کلنٹن پر اس جنگجو گروپ کی بانی ہونے کا سنگین الزام عاید کرچکے ہیں۔اب انھوں نے صدر اوباما کے سر یہ الزام تھوپ دیا ہے اور کہا ہے کہ ہلیری کلنٹن دراصل اس گروپ کی شریک بانی ہیں۔

ری پبلکن پارٹی کے شعلہ بیان صدارتی امیدوار ایک عرصے سے صدر اوباما اور ان کی سابق سیکریٹری آف اسٹیٹ (وزیر خارجہ) ہلیری کلنٹن پر مشرق وسطیٰ میں ایسی پالیسیوں پر عمل پیرا ہونے کے الزامات عاید کر رہے ہیں جن کے نتیجے میں عراق میں طاقت کا خلا پیدا ہوا اور اس سے فائدہ اٹھا کر داعش ایسے گروپ معرض وجود میں آئے۔

مسٹر ٹرمپ نے صدر اوباما کو عراق سے امریکی فوجی واپس بلانے کے اعلان پر بھی کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔تاہم وائٹ ہاؤس نے ان کے ان الزامات پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں