ترکی : دیار بکر میں کار بم دھماکا ، 3 افراد ہلاک ،25 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکی کے جنوب مشرق میں واقع سب سے بڑے شہر دیار بکر کے نواح میں کار بم دھماکے کے نتیجے میں دو پولیس افسروں سمیت تین افراد ہلاک اور پچیس زخمی ہوگئے ہیں۔حکام نے کالعدم کردستان ورکرز پارٹی ( پی کے کے) پر اس بم حملے کا الزام عاید کیا ہے۔

ترک سکیورٹی ذرائع اور دوغان نیوزایجنسی کی اطلاع کے مطابق بم دھماکا دیار بکر اور اس سے مشرق میں واقع شہر بسمل کے درمیان شاہراہ پر ہوا ہے۔مقامی گورنر کے دفتر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کار بم حملے میں پولیس کی ایک عمارت کو نشانہ بنایا گیا ہے اور زخمیوں میں پانچ پولیس افسر بھی شامل ہیں۔ٹیلی ویژن پر نشر کی گئی ویڈیو کے مطابق بم دھماکے سے پولیس کی تین منزلہ عمارت تباہ ہو گئی ہے۔

قبل ازیں بدھ کے روز ترکی کے جنوب مشرقی علاقے میں دو الگ الگ بم حملوں میں آٹھ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ترک حکام نے کرد باغیوں پر ان بم حملوں کا الزام عاید کیا تھا۔اس سے ایک روز پہلے ہی پی کے کے کی مسلح بغاوت کو بتیس پورے ہوگئے ہیں۔کرد قوم پرست مارکسسٹوں نے اپنے لیڈر (اب جیل میں قید) عبداللہ عجلان کی قیادت میں جنوب مشرقی علاقے کی خود مختاری کے نام پر مسلح بغاوت کا آغاز کیا تھا۔

ترک سکیورٹی فورسز اور کرد باغیوں کے درمیان ملک کے جنوب مشرقی علاقوں میں جولائی 2015ء سے لڑائی جاری ہے اور یہ لڑائی حکومت اور کالعدم کردستان ورکرز پارٹی کے درمیان ڈھائی سالہ جنگ بندی کے خاتمے کے بعد چھڑی تھی۔اس دوران ترک فوج نے قریباً چھے ہزار کرد جنگجوؤں کو ہلاک کردیا ہے جبکہ ترکی کے کرد اکثریتی علاقوں میں کرد باغیوں کے حملوں اور جھڑپوں میں چھے سو سے زیادہ فوجی ،پولیس افسر اور دیہی محافظ ہلاک ہوچکے ہیں۔

واضح رہے کہ ترکی کے جنوب مشرقی علاقوں میں 1984ء سے جاری خونریزی میں پینتالیس ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔پی کے کے کا مؤقف ہے کہ وہ کردوں کو زیادہ حقوق اور خودمختاری دلانے کے لیے سکیورٹی فورسز کے خلاف لڑرہی ہے۔ترکی کے علاوہ امریکا اور یورپی یونین نے پی کے کے کو دہشت گرد گروپ قرار دے رکھا ہے۔

ترک سکیورٹی فورسز اور کرد باغیوں کے درمیان جھڑپوں میں دیار بکر میں واقع متعدد تاریخی عمارتوں کو نقصان پہنچا ہے۔
ترک سکیورٹی فورسز اور کرد باغیوں کے درمیان جھڑپوں میں دیار بکر میں واقع متعدد تاریخی عمارتوں کو نقصان پہنچا ہے۔
مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں