سعودی عرب : بحیرہ احمر میں غیر قانونی افریقی تارکین وطن پکڑے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کےسرحدی محافظوں نے غیر قانونی تارکین وطن کی بحیرہ احمر میں ایک کشتی پکڑلی ہے۔اس پر اکتیس غیر قانونی تارکین وطن سوار تھے۔ان میں زیادہ تر سوڈانی ہیں اور وہ سعودی پانیوں میں داخل ہونے کی کوشش کررہے تھے۔

سعودی بارڈر گارڈز کے ترجمان کرنل ساحر الحربی نے بتایا ہے کہ ان کی ایک گشتی پارٹی نے مختلف ملکوں سے تعلق رکھنے والے اکتیس افراد پر مشتمل گروپ کی لکڑی کی ایک کشتی کے ذریعے دراندازی کی کوشش کو ناکام بنایا ہے۔

انھوں نے بتایا ہے کہ ''اس گروپ میں بیس سوڈانی ،چھے نائجیرین اور پانچ ایتھوپیائی باشندے ہیں۔یہ لوگ سوڈان کے ساحل کی جانب سے آرہے تھے''۔

سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق سعودی سرحدی محافظوں نے جون کے بعد سے 339 غیر قانونی تارکین وطن کو مملکت میں داخل ہونے سے روکا ہے۔ان میں سے زیادہ تر سوڈانی ہی تھے کیونکہ ان کے ملک کی سرحد سعودی عرب سے صرف تین سو کلومیٹر دور واقع ہے۔

اقوام متحدہ کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق 2014ء کے بعد افریقا سے بحر متوسطہ کے ذریعے یورپ جانے کی کوشش کے دوران دس ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔یورپ کو اس وقت دوسری عالمی جنگ کے بعد تارکین وطن کے بدترین بحران کا سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں