تمام سعودی ادارے حجاج کے خادم بن کر کام کریں: شاہ سلمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

خادم الحرمین الشریفین اور سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے مملکت کے تمام اداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ حجاج کرام کی حفاظت اور ان کی سہولیات کے لیے ہرممکن اقدامات کو یقینی بنائیں تاکہ وہ فریضہ حج کی ادائی میں کسی قسم کی پریشانی کا سامنا نہ کریں۔ انہوں نے حج بیت اللہ کی غرض سے مملکت میں آنے والے اللہ کے مہمانوں کا استقبال کرتے ہوئے زور دیا کہ حجاج کرام خود کو اللہ کی عبادت کے لیے وقف کر دیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق خادم الحرمین الشریفین کی جانب سے جاری کردہ تازہ احکامات میں کہا گیا ہے کہ تمام حکومتی اور نجی ادارے اللہ کے مہمانوں کی آرام وراحت اور انہیں سہولیات مہیا کرنے کے لیے ہرممکن کوشش کریں۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کی حکومت نے توسیع حرم کے منصوبے کے ساتھ ساتھ مدینہ منورہ اور تمام مشاعر مقدسہ میں حجاج کرام کو سہولیات کی فراہمی پر اربوں ریال خرچ کیے ہیں۔ ہم نے حجاج کی راہ میں حائل ہر قسم کی مشکل اور رکاوٹ ختم کرنے کی کوشش کی۔ بیرون ملک قائم سعودی سفارت خانوں کو ہدایت کی گئی کہ وہ عازمین حج کو ویزوں کے اجراء میں ہر ممکن آسانی پیدا کریں۔ حجاج کرام کے بری، بحری اور فضائی راستوں سے مملکت میں آنے اور ان کے واپس اپنے ملکوں میں جانے تک ریاض حکومت اپنی خدمات جاری رکھے گی۔

شاہ سلمان نے ان خیالات کا اظہار کابینہ کے اجلاس سے اپنے صدارتی خطاب میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم دنیا کے کونے کونے سے بیت اللہ کا حج کرنے کی غرض سے آنے والے فرزندان توحید کو خوش آمدید کہتےہیں۔ انہوں نے حجاج کرام کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ تمام عازمین حج صرف عبادت کی ادائی پر توجہ دیں۔ سعودی عرب کے تمام ریاستی ادارے حجاج کے خادم بن کر کام کریں۔

اجلاس میں 8 اگست کو پاکستان کے شہر کوئٹہ میں ایک اسپتال میں ہونے والی دہشت گردی کی ایک بار پھر مذمت کرتے ہوئے موجودہ مشکل حالات میں پاکستان کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کیا گیا۔ اجلاس میں شام کے شہر ضلب میں نہتے شہریوں پر بمباری اور بے گناہ بچوں اور خواتین کے قتل عام کی شدید مذمت کرتے ہوئے سلامتی کونسل سے حلب میں بمباری بند کرانے پر زور دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں