میلانیا ٹرمپ کا 150 ملین ڈالر کی ہتک عزت کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ نے ڈیلی میل آن لائن اور ایک بلاگر پر اپنے ماضی کی داستانیں سامنے لانے پر ہتک عزت کا دعویٰ کردیا ہے۔

مسز ٹرمپ کے وکیل کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق میلانیا کے ماضی سے متعلق سٹوریز "انتہائی نقصان دہ" ہیں۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل نے پچھلے جمعرات کو اپنی ویب سائٹ پر بیان جاری کیا تھا کہ " ڈیلی میل مسز ٹرمپ کے بارے میں کسی بھی ایسی خبر کو واپس لیتا ہے جس سے ان کے بطور ایسکورٹ (Escort) کام کرنے یا سیکس ورکر ہونے کا عندیہ ظاہر ہوتا ہے۔"

ڈِلی میل نے پچھلے ماہ کے دوران سلووینیا کے ایک میگزین کے حوالے سے رپورٹ کیا تھا کہ ٹرمپ کے زیر انتظام 1990 کی دہائی میں کام کرنے والی ایک ماڈلنگ ایجنسی امیر حضرات کے لئے Escort سروسز فراہم کرنے کا کام کرتی تھی۔

میلانیا ٹرمپ نے 22 اگست کو برطانوی اخبار اور دیگر اداروں کو مطلع کیا تھا کہ وہ ان الزامات کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا ارادہ رکھتی ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے اپنی عزت اور پروفیشنل کیرئیر کو ڈیڑھ کروڑ ڈالر [150 ملین ڈالر] کے نقصانات ہونے کا اظہار کرتے ہوئے بلاگر اور برطانوی اخبار سے یہ رقم ادا کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

میلانیا کے وکیل چارلز ہارڈر کا کہنا تھا کہ "مسز ٹرمپ کے بارے میں دئیے جانے والے بیانات 100 فی صد غلط ہیں اور ان سے ان کی ذاتی اور پروفیشنل زندگی پر بہت منفی اثرات پڑے ہیں۔"

قانونی نوٹس میں میری لینڈ سے تعلق رکھنے والے بلاگر ویبسٹر گرفن ٹریپلی کے بارے میں کہا گیا ہے کہ انہوں نے میلانیا ٹرمپ پر اعصابی دورہ پڑنے کا الزام لگایا ہے جو کہ سراسر غلط ہے۔

میلانیا ٹرمپ سلوینیا سے پپیدا ہوئی تھیں اور 1990 کی دہائی میں امریکا منتقل ہوگئی تھیں۔ انہوں نے 2005ء میں ڈونلڈ ٹرمپ سے شادی رچا لی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں