امریکا میں ایران کو ایک ارب 70 کروڑ ڈالرز نقد ادا کرنے پر تنازعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکا کی اوباما انتظامیہ نے ایران کو اس سال کے اوائل میں ایک ارب ستر کروڑ ڈالرز کی رقم نقدی کی شکل میں منتقل کرنے کا اقرار کیا ہے لیکن کہا ہے کہ یہ رقم غیر امریکی کرنسی میں منتقل کی گئی تھی جبکہ ری پبلکنز نے ایران کو رقم لوٹانے کے معاملے پر تنقید جاری رکھی ہوئی ہے۔

امریکی محکمہ خزانہ کی خاتون ترجمان ڈان سیلاک نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس رقم کی نقدی کی شکل میں منتقلی ضروری تھی کیونکہ امریکی اور عالمی پابندیوں کے موثر نفاذ کی وجہ سے ایران بین الاقوامی مالیاتی نظام سے الگ تھلگ ہوکر رہ گیا تھا۔

امریکا نے ایک ارب ستر کروڑ ڈالرز کی رقم ایران کے ساتھ برسوں پرانے دعوے کے تصفیے کے تحت ادا کی تھی۔ابتدائی طور پر 17 جنوری کو چالیس کروڑ ڈالرز یورو ،سوئس فرانک اور دوسری غیرملکی کرنسی کی شکل میں ادا کیے گئے تھے ،اسی تاریخ کو ایران نے چار امریکیوں کی رہائی سے اتفاق کیا تھا۔

اوباما انتظامیہ نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ یہ دونوں الگ الگ واقعات تھے لیکن حال ہی میں اس نے تسلیم کیا ہے کہ اس نے رقوم کی منتقلی کو امریکیوں کی رہائی کے لیے ایک حربے کے طور پر استعمال کیا تھا۔

باقی ایک ارب تیس کروڑ ڈالرز 1970ء کے عشرے سے امریکا کے ذمے ایران کی واجب الادا نقد رقم کا سُود تھے۔ اوباما انتظامیہ نے پہلے اس بات سے انکار کیا تھا کہ اس نے سودی رقم نقد شکل میں ادا کی ہے یا بنک کاری نظام کے تحت دی ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ ،انصاف اور خزانے کے عہدے داروں نے منگل کے روز کیپٹول ہل میں کانگریس کے عملے کو ان ادائیوں کے بارے میں بریفنگ دی تھی اور بتایا تھا کہ ایران کو ایک ارب تیس کروڑ ڈالرز 22 جنوری اور 5 فروری کو نقد ادا کیے گئے تھے۔

ری پبلکنز نے پہلے یہ دعویٰ کیا تھا کہ یہ رقم ایران کو امریکیوں کی رہائی کے لیے تاوان کے طور پر ادا کی گئی تھی لیکن اوباما انتظامیہ نے اس دعوے کو مسترد کردیا تھا۔منگل کے روز ری پبلکن سینیٹروں نے ایک مجوزہ قانون کی حمایت کا اعلان کیا ہے جس کے تحت ایران کو مستقبل میں ججمنٹ فنڈ سے کسی قسم کی رقم اس وقت تک ادا نہیں کی جاسکے گی جب تک وہ امریکی عدالتوں کے فیصلے کے تحت ایرانی دہشت گردی سے متاثرہ امریکیوں کو 55 ارب 60 کروڑ ڈالرز ہرجانے کے طور پر ادا نہیں کر دیتا۔امریکی ایوان نمائندگان اور سینیٹ دونوں نے ایران کو رقوم کی ادائی کے معاملے پر اوباما انتظامیہ سے پوچھ تاچھ کا فیصلہ کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں