سویڈن: زندگی بخش بندوق کی گولی ایجاد

کھیتوں میں کاشت کاری کے لیے بندوق اور اس کی گولی تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

بندوق، آتشیں اسلحہ، گولیاں اور بارود کا نام سنتے ہی ذہن فورا موت اور تباہی وبربادی کی طرف جاتا ہے کیونکہ مذکورہ تمام اشیاء زندگی بخش نہیں بلکہ موت کا موجب بنتی ہیں مگر سویڈن کی ایک کمپنی نے ایک ایسی گولی ایجاد کی ہے جوموت نہیں بانٹتی بلکہ حیات بخش ثابت ہوتی ہے۔

قارئین حیران ہوں گے کہ آخر بندوق کی ایسی کونی سی گولی اور کارتوس ہوسکتا ہے جو موت کے بجائے زندگی بخشے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ نے اس منفرد کارتوس کے حوالے سے ایک رپورٹ میں روشنی ڈالی ہے۔ یہ کارتوس دراصل ایک زرعی کمپنی کی ایجاد ہے۔ کارتوس میں پھلوں، پھولوں، اناج یا ترکاریوں وغیرہ کے بیج ڈال کرانہیں بندوق سے کھیت میں فائر کیا جاتا ہے۔ یہ کارتوس زمین میں گھس جاتے ہیں۔ اس طرح چند دنوں کے بعد فائر کردہ کارتوس سے کوئی کونپل پھوٹ نکلتی ہے۔ اس طرح نباتات کی کوئی نئی چیز جنم لیتی ہے۔

کسانوں کے لیے یہ بندوق دلچسپ ہے اور لوگ دھڑا دھڑ اسے خرید رہے ہیں۔ اس لیے نہیں کہ انہیں کوئی جنگ لڑنا ہے۔ اس لیے کہ وہ بندوق اور اس کے کارتوس کی مدد سے فصلیں اگا رہے ہیں۔

فصلیں اگانے کے لیے تیار کردہ کارتوس 12 ملی میٹر دھانے والی بندوق سے داغا جاتا ہے۔ کھیتی باڑی کے لیے ہموار زمین میں یہ کارتوس 12 مختلف اقسام کی فصلوں کے بیج بونے کا ذریعہ ہے۔ ان میں سورج مکھی،لیونڈر اور لونگ کی کاشت خاص طور پرشامل ہے۔

کھیتی باڑی کے لیے تیار کردہ کارتوس میں بارود کی جگہ بیج ڈالے جاتے ہیں۔ مگرپہلے ان بیجوں کو قابل کاشت بنانے کے لیے ایک خاص ماحول سے گذارنا پڑتا ہے۔ تاہم کمپنی نے خبردار کیا ہے کہ بیج گولی کے غلط استعمال سے انسانی جان کو خطرہ بھی لاحق ہوسکتا ہے۔ اس لیے اس کے استعمال میں احتیاط کی بھی اشد ضرورت ہے۔

یہ بات قابل ذکر رہے کہ سویڈن واحد ملک ہے جس گذشتہ ایک صدی سے جنگ وجدل سے محفوظ ہے۔ مگر اس کا یہ مطلب نہیں وہ اسلحہ تیار نہیں کررہا۔ سویڈن نے کیمیائی ہتھیاروں کی تیاری کے لیے جوہری تنصیبات بھی بنا رکھی ہیں۔ ’جاز‘ نامی جنگی طیارہ جس کا شمار دنیا کے دس بہترین لڑاکا طیاروں میں ہوتا ہے سویڈن ہی کی جنگی مصنوعات کا حصہ ہے۔ کاروں اور گھریلوسامان کی تیاری میں بھی سویڈن خود کفیل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں