.

یمن: اومانی نمبر پلیٹوں والے ٹرکوں پرحوثیوں کے لیے اسلحہ کس نے بھیجا ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں صدر عبد ربہ منصور ہادی کے اتحادیوں نے اومانی نمبر پلیٹوں والے ٹرکوں پر ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں کے لیے بھیجا گیا اسلحہ پکڑ لیا ہے۔

سعودی ملکیتی روزنامے الحیات نے یمن کے صوبے مآرب کے گورنر سلطان الرضا کے حوالے سے بتایا ہے کہ ان گاڑیوں پر ہتھیار اور گولہ بارود صوبے حضرموت سے حوثیوں کے زیر قبضہ دارالحکومت صنعا کی جانب بھیجا جارہا تھا۔

سلطان الرضا یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی کے اتحادی ہیں اور ان کی وفادار فورسز مآرب میں سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کی فضائی مدد سے حوثی شیعہ باغیوں کو ان کے زیر قبضہ سے پسپا کرنے کے لیے کوشاں ہیں۔

اومانی حکام نے فوری طور پر ان ٹرکوں کے بارے میں کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے۔الحیات نے لکھا ہے کہ ''سلطان الرضا نے اسلحے کی اس کھیپ سے کسی بیرون تعلق کی تصدیق نہیں کی ہے اور ان سے اومانی حکام کے کسی قسم کے تعلق کی بھی فوری طور پر تصدیق نہیں ہوئی ہے''۔

واضح رہے کہ سلطنت آف اومان یمن میں جاری لڑائی میں غیر جانبدار ہے اور اس نے ماضی میں ایران اور سعودی عرب کے درمیان مصالحت کرانے کی بھی کوشش کی تھی۔

سعودی عرب اور یمن کی بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ حکومت ماضی میں ایران پر حوثی شیعہ باغیوں کو برّی اور بحری راستے سے اسلحہ اور گولہ بارود پہنچانے کے الزامات عاید کرچکے ہیں۔ سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد کے بحری جہاز ایران کی جانب سے مبینہ طور پر بھیجنے جانے والے اسلحے کو حوثیوں کے ہاتھ لگنے سے روکنے کے لیے یمن کے پانیوں میں گشت بھی کررہے ہیں۔