کینیڈا کے وزیراعظم برطانوی شہزادے کے سامنے شرمندگی سے دوچار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی ولی عہد شہزادہ ولیم اوران کی اہلیہ کیٹ مڈلٹن کینیڈا کے پہلے سرکاری دورے پر ہفتے کے روز برٹش کولمبیا پہنچے تو ہوئی اڈے پر کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے شاہی جوڑے کا استقبال کیا۔

اس موقع پر جسٹن ٹروڈو رن وے پر شہزادہ ولیم کے تین سالہ بیٹے جارج کے سامنے بیٹھ گئے اور مصافحے کے لیے اس کے آگے ہاتھ بڑھایا۔ تاہم ٹروڈو کو اس وقت شدید شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا جب اپنے والد کا ہاتھ تھامے ہوئے شہزادہ جورج نے ٹروڈو کو مکمل طور پر نظرانداز کر دیا۔

کینیڈا کے عوام نے ننھے جارج کی جانب سے اس حرکت کو بہت شدت سے محسوس کیا اس لیے کہ وہ دنیا بھر میں لاکھوں لوگوں کو اپنے وزیراعظم پر دل نچھاور کرتے ہوئے دیکھنے کے عادی ہیں اور ٹروڈو کو سوشل میڈیا پر ایک اسٹار کی حیثیت حاصل ہے۔

ایک خاتون نے ٹوئیٹر پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ "میرا دل یہ منظر دیکھتے ہوئے 15 بار چھلنی ہوا"۔ خاتون کا اشارہ اس منظر کی جانب تھا جس کا دورانیہ 15 سیکنڈ کے قریب رہا۔

اس سے قبل شہزادہ جورج نے اپریل میں امریکی صدر کے دورہ برطانیہ کے موقع پر باراک اوباما سے ہاتھ ملایا تھا۔

تین سالہ شہزادہ جورج اور اس کی ایک سالہ بہن شیرلوٹ اپنے والدین کے ساتھ پہلی مرتبہ کینیڈا میں موجود ہیں تاہم یہ ان بچوں کے والدین کا دوسرا دورہ ہے۔ شہزادہ ولیم اور ان کی اہلیہ کیٹ نے 2011 میں کینیڈا کا غیر سرکاری دورہ کیا تھا۔

شاہی جوڑے کا کینیڈا کا دورہ یکم اکتوبر کو اختتام پذیر ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں