.

مس یونیورس.. جس کو ٹرمپ نے "خنزیر" قرار دیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں صدارتی انتخابات کے دونوں امیدواروں ہیلری کلنٹن (ڈیموکریٹک) اور ڈونلڈ ٹرمپ (ریپبلکن) کے درمیان بھڑکتے ہوئے مناظرے میں ہیلری نے ٹرمپ پر الزام عائد کیا کہ وہ خواتین کا احترام نہیں کرتے ہیں اور انہوں نے ایک خاتون کو "خنزير" تک قرار دیا تھا۔

ہیلری کے مطابق وہ خاتون 1996 میں مس یونیورس کا ٹائٹل جیتنے والی ایلیشیا میچاڈو ہیں جو 8 نومبر کو مقررہ صدارتی انتخابات میں ٹرمپ کے خلاف ووٹ دینے کے لیے تیار بیٹھی ہیں۔ ڈیموکریٹک امیدوار ہیلری کے مطابق ٹرمپ نے جب مس یونیورس کا ایونٹ خریدا تو انہوں نے میچاڈو کو ان کے بڑھے ہوئے وزن کی وجہ سے "خنزیروں کی ملکہ حسن" قرار دیا تھا۔

ایلیشیا میچاڈو 1996 میں مس وینزویلا اور مس یونیورس قرار دی گئی تھیں۔ میچاڈو نے ٹرمپ کو اپنی اہانت اور "احمقانہ حرکتوں" کا مورود الزام ٹھہرایا ہے۔ میچاڈو نے یہ بات ہیلری کلنٹن کی انتخابی مہم کی جانب سے منعقدہ ایک پریس کانفرنس کے دوران کہی۔ سابقہ مس یونی ورس نے انکشاف کیا کہ وہ ایک موقع پر وزن کم کرنے کے لیے ورزش کے دوران ٹرمپ کے ساتھ بنائی جانے والی اپنی تصویر پر ہتک محسوس کر رہی تھیں۔

ہیلری کلنٹن کی انتخابی مہم کی جانب سے ٹرمپ پر نکتہ چینی کے ہر موقع سے فائدہ اٹھانے کے سبب گزشتہ برسوں کے دوران میچاڈو کی جانب سے ماضی میں کی جانے والی خلاف ورزیوں پر پردہ آ گیا۔ 1998 کے عدالتی دستاویزات سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ میچاڈو کے ساتھ اس امر کے حوالے سے تحقیقات ہوئی تھیں کہ انہوں نے اپنے ایک دوست کو جائے واردات سے فرار ہونے میں مدد دی تھی جو قتل کی ایک کوشش میں ملوث تھا۔

ایک جج نے تو سرکاری ٹی وی پر اس بات کا دعوی بھی کیا کہ میچاڈو نے ان کی زندگی کے حوالے سے دھمکی دی تھی۔ تاہم دونوں معاملات میں میچاڈو کو قانونی طور پر ملزم ٹھہرائے جانے کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔

ایلیشیا میچاڈو (39 سالہ) کو جو اب ایک اداکارہ ہیں رواں برس ہی امریکا کی شہریت ملی ہے۔ انہوں نے ٹوئیٹر پر ہیلری کلنٹن کے لیے اپنی حمایت اور آئندہ انتخابات میں ان کے حق میں ووٹ دینے کا اعلان کیا ہے۔